نیشنل ایکشن پلان پر رینجرز کو جتنے اختیارات سندھ میں ہیں وہ کسی صوبے میں نہیں،مولا بخش چانڈیو

نیشنل ایکشن پلان پر رینجرز کو جتنے اختیارات سندھ میں ہیں وہ کسی صوبے میں ...
نیشنل ایکشن پلان پر رینجرز کو جتنے اختیارات سندھ میں ہیں وہ کسی صوبے میں نہیں،مولا بخش چانڈیو

  


کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) مشیر اطلاعات سندھ مولا بخش چانڈیو نے کہا ہے کہ مخالفین نے ”رینجرز اختیارات“کے مسئلے کو متنازع بنانے کیلئے کوئی کسر نہیں چھوڑی،امن امان کا مسئلہ پورے پاکستان میں ہے،لیکن نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد کیلئے پاکستان رینجرز کو جتنے اختیارات سندھ میں دیئے گئے ہیں وہ ملک کے کسی صوبے میں نہیں ہے،وزیر اعلیٰ ہاﺅس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے مو لا بخش چانڈیو نے کہا کہ اداروں کو لڑانے کی کوشش کی گئی لیکن ہم نے صبر و تحمل سے کام لیا اورنیشنل ایکشن پلان کے تحت رینجرز کو تمام اختیارات دیئے اور انکو اسمبلی سے قانونی کور مہیا کیا،نیشنل ایکشن پلان کے تحت رینجرز کو چاروں اختیارات دے دئے گئے جو ان کو پہلے حاصل تھے، تاجروں کے خدشات تھے وہ ختم کردئے گئے۔رینجرز اختیارات پر کوئی قدغن نہیں لگایا گیا، جن باتوں کی وجہ سے غلط فہمیاں ہو رہیں تھیں ان کو حل کیا گیایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر عاصم سے تمام تفتیش مکمل ہو چکی ہے اب ہم انکو کیا فائدہ دے سکتے ہیں۔ وفاقی حکومت کے کچھ وزراءکے مزاج جمہوریت پسند نہیں ،ہر صوبے کی خود مختاری اور اختیارات ہوتے ہیں صوبائی خود مختار ی کو ماننا چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے ہمیشہ رینجرز کی قربانیوں کو اورانکی کاروائیوں کی حمایت کی ہیں اور اسمبلی میں پیش کئے گئے بل میں بھی ان کی تعریف کی ہے۔مولا بخش چانڈیو کا کہنا تھا کہ دوسرے صوبوں میں فرشتوں کی حکومت نہیں ہے دوسرے صوبے رینجرز کوکیوں نافذ نہیں کر رہے ہیں۔نوازشریف نے فوج کو بجلی کے بل جمع کرانے پر لگا دیا،لیکن کسی نے مخالفت نہیں کی، فوج بہت محترم ادارہ ہے ایسے مسئلے پیدا نہ کریں کہ یہ ادارہ بدنام ہو۔ اپوزیشن ہماری ہر بات کی نفی کرتے ہیں۔

مزید : کراچی


loading...