معاشرے میں انصاف نہ ہو تو خوشحالی نہیں آتی ، فیصلے پر خوشی ہوئی ، شکر ادا کرتا ہوں : عمران خان

معاشرے میں انصاف نہ ہو تو خوشحالی نہیں آتی ، فیصلے پر خوشی ہوئی ، شکر ادا ...

  



کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ میں سب سے زیادہ تلاشی میری ہوئی ہے اور عدالتی فیصلے پر اللہ کا شکر ادا رکرتا ہوں، میرا موازنہ منی لانڈرنگ کے بادشاہ کے ساتھ کیا جا رہا ہے ، نواز شریف کو کیس کرنے کیلئے منشیات فروش کے سوا کوئی نہیں ملا، تحریک انصاف کو سپریم کورٹ کا فیصلہ تسلیم ہے اور ہم جہانگیر ترین فیصلے پر نظرثانی میں جائیں گے۔ سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے چیئر مین تحریک انصاف عمران خان کا کہنا تھا کہ میں بیرون ملک کرکٹ کھیل کر پیسے پاکستان لایا جبکہ نواز شریف نے غریب عوام کا پیسہ منی لانڈرنگ کے ذریعے بیرون ملک بھیجا۔جہانگیر ترین کے فیصلے پرافسوس ہوا، تکلیف یہ ہے کہ میرا اس شخص سے ایک سال تک موازنہ کیا گیا جبکہ جس نے غریب قوم کا پیسا چوری کیا اس سے موازنہ کیا گیا۔ ایک سال سپریم کورٹ میں میرا کیس چلا،نواز شریف کو کوئی اور شخص نہیں ملا ہوگا اور مجھ پر کیس کرنے کیلئے ایک منشیات فروش کے ذریعے کیا گیا۔ میں نے عدالت میں60سے زیاد ہ دستاویزات جمع کرائیں جبکہ شریف خاندان بتا نہیں سکتا کہ ان کے پاس پیسے کہاں سے آئے، ان کے پاس ہر چیز کا جواب قطری خط ہے حالانکہ تاریخ کا سب سے بڑا جھوٹ یہ قطری خط ہے۔ عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ نیب نے شریف خاندان کی پوری مدد کرکے حدیبیہ پیپرز ملز کیس سے ان کی جان چھڑائی۔ نیب کے اندر شریف خاندان نے اپنے لوگ رکھے ہوئے ہیں جنہوں نے جان بوجھ کر حدیبیہ پیپر ملز کا کیس خراب کیا۔

عمران خان

ٹنڈو محمد خان (آئی این پی) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ معاشرے میں انصاف نہ ہو تو خوشحالی نہیں آتی، جس طرح سندھ میں کرپشن ہو رہی ہے یہاں سرمایہ کاری نہیں ہو گی، یہاں لوگ اقتدار میں آ کر پیسہ بناتے ہیں، وزیروں کی کرپشن سے سارا معاشرہ تباہ ہو جاتا ہے کیونکہ اس ملک میں کوئی سرمایہ کاری ہی نہیں کرتا،سندھ میں پولیس کا نظام سب سے زیادہ خراب ہے، عزیب لوگوں کو کچہریوں میں گھسیٹا جاتا ہے،سندھ میں انصاف نہیں جنگل کا قانون ہے،سندھ میں ہماری حکومت آئی توپیسہ تعلیم پر خرچ کرینگے، ایک دن ایسا آئے گا کہ اس ملک کے وزیر اعظم اور وزرا ء کے بچے بھی سرکاری سکولوں میں تعلیم حاصل کریں گے،ہم آپ کو سندھ کی پولیس ٹھیک کر کے دکھائیں گے، پختونخوا میں پہلی دفعہ سرکاری ہسپتالوں کو ٹھیک کیا جا رہا ہے۔وہ جمعہ کو ٹنڈو محمد خان میں عوامی جلسہ سے خطاب کر رہے تھے۔ چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ ٹھنڈی شام میں یہاں کے لوگوں کے جوش و خروش کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں، ابھی کل الف اعلان کے تعلیم کے حوالے سے ایک سروے آیاہے جس کے مطابق سندھ اور بلوچستان تعلیم میں پنجاب اور کے پی کے سے پیچھے رہ گئے ہیں، پہلے پنجاب آگے ہے، مگر اب فخر سے کہتا ہوں کے پی کے سب سے آگے ہے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ میں حکمران رہنے والی جماعتوں نے تعلیم پر توجہ نہیں دی ، حکمرانوں کے بچے انگلش میڈیم سکولوں میں جاتے ہیں، عوام کے بچے سکولوں اور مدرسوں میں جاتے ہیں، سرکاری اور دینی مدارس میں پڑھ کر عوام کے بچے اوپر نہیں آسکتے، پختونخواہ میں سب سے زیادہ پیسہ تعلیم پر خرچ کیا گیا۔ عمران خان نے کہا کہ سندھ میں ہماری حکومت آئی توپیسہ تعلیم پر خرچ کرینگے، سندھ کا پولیس کا نظام سب سے زیادہ خراب ہے، غریب لوگوں کو کچہریوں میں گھسیٹا جاتا ہے،سندھ میں انصاف نہیں جنگل کا قانون ہے۔

سندھ جلسہ

مزید : صفحہ اول


loading...