سپریم کورٹ نے ٹرسٹ ڈیڈ کی محض تشریح پر مجھے نااہل قرار دیا : جہانگیر ترین

سپریم کورٹ نے ٹرسٹ ڈیڈ کی محض تشریح پر مجھے نااہل قرار دیا : جہانگیر ترین

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ کی جانب سے تاحیات نااہل قرار دئیے جانے کے بعد تحریک انصاف کے جنرل سیکریٹری جہانگیر ترین نے کہا ہے کہ عدالت عظمیٰ نے ٹرسٹ ڈیڈ کی محض تشریح پر انہیں نااہل قرار دیا۔عدالت نے جہانگیر ترین کو آرٹیکل 62 ون ایف کے تحت تاحیات نااہل قرار دیتے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی رہنما نے اپنے بیان میں مشکوک ٹرمز استعمال کیں اور صحیح جواب نہ دینے پر انہیں ایماندار قرار نہیں دیا جاسکتا۔سپریم کورٹ نے فیصلے میں کہا کہ جہانگیر ترین نے آف شور کمپنی ظاہر نہیں کی اور عدالت کے سامنے جھوٹ بولا، الیکشن کمیشن جہانگیر ترین کی نااہلی کا نوٹیفکیشن جاری کرے۔عدالت نے فیصلے میں کہا کہ جہانگیر ترین کے خلاف زرعی اراضی پر فیصلہ ابھی نہیں سنایا جارہا۔فیصلے کے بعد جہانگیر ترین نے کہا کہ لندن پراپرٹی کی مکمل منی ٹریل قبول کی گئی،چھپائی نہیں، لندن پراپرٹی کو2011 سے بچوں کا اثاثہ ظاہر کیا۔انہوں نے کہا کہ مجھ پرانسائیڈ ٹریڈنگ اور زرعی آمدن چھپانے کا الزام تھا، مجھ پر لگائے گئے الزامات مسترد ہوئے۔

جہانگیر ترین

مزید : صفحہ اول