سپریم کورٹ کو ایف ،آئی آر خارج کرنے کا اختیار نہیں ، ریفرنس کیسے ختم ہو گیا ؟

سپریم کورٹ کو ایف ،آئی آر خارج کرنے کا اختیار نہیں ، ریفرنس کیسے ختم ہو گیا ؟
 سپریم کورٹ کو ایف ،آئی آر خارج کرنے کا اختیار نہیں ، ریفرنس کیسے ختم ہو گیا ؟

  

ممتاز قانون دان اظہر صدیق ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ حدیبیہ کیس میں شہباز شریف اور حنیف عباسی کیس میں عمران خان کے حق میں سپریم کورٹ کے فیصلے نظریہ ضرورت نہیں بلکہ یہ میرٹ اور آئین اور قانون کے مطابق ہیں تاہم حدیبیہ کیس خارج کر کے سپریم کورٹ نے کوئی اچھی روایت نہیں ڈالی ایسے فیصلے ٹرائل کورٹ میں کئے جاتے ہیں اس طرح کے کیسوں میں سپریم کورٹ کو ایف آئی آر کے خارج کرنے کااختیار نہیں تو ایک ریفرنس کیسے ختم ہو گیا اس فیصلے میں حکومت کی جیت ہوئی ہے وہ ایشو آف دی ڈے میں گفتگو کر رہے تھے ،انہوں نے کہا کے عمران خان اور جہانگیر ترین کے حوالے سے سپریم کورٹ کا فیصلہ میرٹ پر آیا ہے تاہم حدیبیہ کیس میں شہباز شریف کو ریلیف نیب کی کمزوری کے باعث ملا ہے نیب نے اس کیس کے حوالے مکمل پیروی کی نہ اس سے متعلقہ دستاویزی ثبوت پیش کئے ،حالانکہ چیئرمین نیب نے اس کیس کی پیروی کیلئے الگ سے شاہ خاور کو پراسیکیوٹر جنرل تعینات کیا تھا مگر حکومت نے اس کا نوٹیفیکیشن نہ ہو نے دیا یہی وہ وجوہات ہیں جو حکومت کو اس کیس میں بچا گئیں ۔

اظہر صدیق ایڈوکیٹ

مزید : صفحہ اول