ائیر پورٹس ایف آئی اے، کسٹم مافیا کی چاندی، سالانہ اربوں کی منی لانڈرنگ

ائیر پورٹس ایف آئی اے، کسٹم مافیا کی چاندی، سالانہ اربوں کی منی لانڈرنگ

لاہور (ارشد محمود گھمن/سپیشل رپورٹر) صو بائی دارالحکومت سمیت پاکستان بھر کے دیگر ائیر پو رٹس پر ایف آئی اے اور کسٹم مافیا کی چا ندی سالانہ اربوں ر وپے کی منی لانڈرنگ ہو نے کا انکشاف ہوا ہے،اندرون وبیرون ممالک جانے والے مسافروں کو غیر ممنوع اشیاء کے نام پر چیکنگ کے دوران شدید مشکلات کا سامنا ہے، ایف آئی اے کا عملہ پاسپورٹ و دیگر کاغذات پر طرح طرح کے اعتراضات لگا کر منہ مانگے دام وصول کرنے میں مصروف ہیں، ڈیوٹی پر موجود کسٹم ،ایف آئی ا ے اور اے ایس ایف کے عملہ کی مبینہ کرپشن کے ہاتھوں تنگ مسافروں کا حکام بالا سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ علامہ اقبال انٹر نیشنل ائیر پورٹ لاہو ر،بے نظیر انٹر نیشنل ائیر پورٹ اسلام آباد،قائد اعظم انٹر نیشنل ائیر پورٹ،سیالکوٹ انٹر نیشنل ائیر پورٹ و دیگر ائیر پورٹس سے پاکستان میں بیرون ممالک روزگار کے سلسلہ میں جانے اور واپس اپنے ملک میں فیملی کو ملنے کے لیے آنے والے پاکستانی مختلف تحا ئف لیکر جب ائیر پورٹ لاہور پہنچتے ہیں تو وہاں پر موجود تعینات عملہ مختلف بہانوں سے ان کے سامان کی چیکنگ میں لگ جاتا ہے یہاں تک کہ مسافروں کے سامان سے قیمتی اشیاء پرفیوم،موبائل فون اور دیگر اشیاء غائب ہو جاتی ہیں،مسافروں کے تکرار کرنے پر انہیں کئی گھنٹے کسٹم،ایف آئی اے اور اے ایس ایف کے عملہ کے سامنے پیشیاں بھگتنا پڑتی ہیں، جس کے باعث مسافر تنگ ہو کر یا تو اپنا سامان چھوڑ جاتے ہیں یا پھر ان کو منہ مانگے دام دینے پڑتے ہیں۔ذرائع کے مطابق بعض اوقات ایف آئی اے کا عملہ بیرون ممالک ساؤتھ افریقہ ،دبئی ،کویت، وغیرہ جانے والے شریف شہریوں کے پاسپورٹ پر طرح طرح کے اعتراضات لگا کربھاری رشوت طلب کرتے ہیں جبکہ مجبور ہو کران مسافروں کو ادا کرنے پڑتے ہیں۔علاوہ ازیں سیاسی و کاروباری افراد کے ساتھ مل کر اور ان کے ساتھ مبینہ ملی بھگت کر کے ہر سال اربوں روپے کی منی لانڈرنگ بھی کی جاتی ہے۔تا ہم ترجمان ائیر پورٹس کا کہنا ہے کے منی لانڈرنگ کے حوالے سے سیکورٹی سخت ہے اور باقی اگر کسی ذمہ دار افیسر کے متعلق شکایت ہو تی ہے تو بر وقت کارروائی عمل میں لائی جاتی ہے۔

ائیر پو رٹ

مزید : صفحہ آخر