زمینداروں کے کام ترجیحاً کیے جائیں: جعفر لغاری

زمینداروں کے کام ترجیحاً کیے جائیں: جعفر لغاری

جھوک اترا (نمائندہ پاکستان) این اے 174کے ایم این اے سردار جعفر خان لغاری نے گزشتہ روز (بقیہ نمبر55صفحہ12پر )

اراضی سنٹر کوٹ چھٹہ میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میں نے ریکارڈ سنٹر میں نئے تعینات ہونے والے اے ڈی ایل آر کو ہدایت کی ہے کہ زمینداروں کے معاملات بروقت حل کیے جائیں جس پر اراضی سنٹر عملہ سٹاف کی کمی عندیہ دیا ہے جس کو جلد حل کراوں گا مزید انہوں نے کہا کہ میری کوششوں کی بدولت سخی سرورسے کھر تک سٹیل پل کو مکمل کیا جارہا ہے جسکو سی پیک کا حصہ بنایا جائے گا اور کوشش ہے کہ رمک سے روجھان تک انڈس ہائی وے کو دورویہ کیا جائے تاکہ روڈ حادثوں میں اموات کی شرح میں کمی واقع ہو انہوں نے مزید کہا کہ ڈپٹی سپیکر پنجاب شیر علی گورچانی روزانہ کی بنیاد پر بس اڈوں سے بھتہ وصول کرتے ہیں جن میں راجن پور سے 8500 ہزار شیر علی پرویز ،اڈا اللہ آباد سے 9000 ہزار شیر دل ،شیر افگن ،اڈا فاضل پور سے 16000 پروویز ،شیر زمان ،اڈا محمد پور سے پانچ ہزار شیر دل اور جامپور سے بھی اسی طرح روزانہ کی بنیاد وصول کر رہے ہیں جو کہ سالانہ کروڑوں میں بنتے ہیں جس کا ریکارڈ میں نے سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف اور دیگر عہدداروں کو بھی دیے جا چکے ہیں اور ضلع راجن پور میں بننے والے روڈز کے اکثریتی ٹھیکے گورچانی ایکسین راجن پور کے زریعے اپنے منظور نظر ٹھیکیدار کو دلوائے جارہے ہیں جن میں سے ایک کے خلاف ابھی تک سی ایم اے ٹی میں انکیوری چل رہی ہے اور علاقوں میں آ بادی کا تناسب بڑھنے سے نئی حلقہ بندیاں ہو رہی ہیں جن میں میری کو شش ہے کہ دو سیٹں سردار مقصود احمد خان لغاری کو دے کر منا لیا جائے تاکہ سردار اویس احمد خان لغاری اور ان کے مابین دوریاں ختم ہو سکیں اور حلقہ پی پی 246 میں بھی سردار محمد یوسف خان لغاری کو دوبارہ ایڈجیسٹ کیا جارہا ہے ۔

جعفر لغاری

مزید : ملتان صفحہ آخر