سقوط ڈھاکہ بھارت کی بالا دستی قائم کرنیکا ایک منصوبہ تھا،زبیر فاروق

سقوط ڈھاکہ بھارت کی بالا دستی قائم کرنیکا ایک منصوبہ تھا،زبیر فاروق

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) امیر جماعت اسلامی اسلام آباد زبیر فارو ق خان نے کہا ہے کہ بنگلا دیش میں جماعت اسلامی کے رہنماؤں کو پاکستان سے محبت کے جرم میں آج بھی پھانسیوں کے پھندوں پر لٹکایا جا رہا ہے ، جبکہ پاکستان کی سول اور ملٹری قیادت خاموش تماشائی کا کردار ادا کر رہے ہیں ، سانحہ سقوط ڈھاکہ دشمن سے زیادہ اپنوں کا کیا دھرا تھا مگر آج تک اس کے ذمہ داروں کا تعین کیا گیا نہ قوم کواصل حقائق سے آگاہ کیا گیا۔انھوں نے کہا حسینہ واجد بھارت کے ہاتھوں میں کھلونا بنی ہوئی ہے اور خاص طور پر جماعت اسلامی کے بزرگ رہنماؤں کو نشانہ بنارہی ہے۔ان خیالات کا اظہار انھوں نے اسلامی جمعیت طلبہ کے وفد سے ملاقات کے موقع پر گفتگو کر تے ہو ئے کیا۔زبیر فاروق خان نے کہا حکمرانوں کوسقوط بغداد ،سقوط غرناطہ اور سقوط ڈھاکہ جیسے سانحات سے عبرت پکڑنی چاہئے اور قبلہ اول کی آزادی کیلئے متحد ہوکر مشترکہ کوشش کرنی چاہئے ۔ سقوط ڈھاکہ بھارت کی بالا دستی قائم کرنے کا ایک منصوبہ تھا اور اسی منصوبے کے تحت پاکستان کو کمزور سے کمزور بنایا جارہا ہے ۔ انھوں نے کہاماضی کی تمام غلطیوں اور جرائم کو سامنے رکھتے ہوئے ملک کے اندر قومی ترجیحات متعین کی جائیں اسی صورت میں ملک مستحکم اور مضبوط ہوسکتا ہے۔ ماضی میں بھی آئین کی بالادستی کو قبول نہیں کیا گیا سول اور ملٹری بیوروکریسی نے اپنی من پسند قیادت پیدا کی اگر اس رویہ اور عمل کو نہ بدلا گیا تو یہ ملک اور قوم کے لیے نقصان دہ ثابت ہوگا ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...