دونوں ٹانگوں سے معذور احتجاج کرتے اِس فلسطینی شہری کو اسرائیلی فوج نے اِس احتجاج کی کیا سزا دی؟ جان کر دنیا کے ہر مسلمان کا خون کھول اُٹھے

دونوں ٹانگوں سے معذور احتجاج کرتے اِس فلسطینی شہری کو اسرائیلی فوج نے اِس ...
دونوں ٹانگوں سے معذور احتجاج کرتے اِس فلسطینی شہری کو اسرائیلی فوج نے اِس احتجاج کی کیا سزا دی؟ جان کر دنیا کے ہر مسلمان کا خون کھول اُٹھے

  

یروشلم(نیوز ڈیسک)امت مسلمہ کے جسم میں زہریلا خنجر بن کر پیوست ہونے والے غاصب ملک اسرائیل کی حیوان صفت فوج کی سفاکی کا اندازہ کیجئے کہ گزشتہ روز ہونے والے ایک مظاہرے میں شامل معذور شخص ، جو دونوں ٹانگوں سے محروم تھا، کو بھی گولیاں مار کر بے دردی سے قتل کر ڈالا ۔ 

میل آن لائن کے مطابق 29 سالہ ابراہیم ابو ثریا غزہ شہر میں ہونے والے ایک مظاہرے میں وہیل چیئر پر بیٹھ کر شریک تھا۔ یہ مظاہرہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دینے کے فیصلے کے خلاف کیا جا رہا تھا ۔ وحشی اسرائیلی فوج نے پر امن مظاہرین پر گولی چلا دی اور وہیل چیئر پر بیٹھا ابراہیم بھی ان کی گولیوں کا نشانہ بن گیا۔ اسے فوری طور پر الشفا ءہسپتال لیجایا گیالیکن وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہو گیا۔

ابراہیم کو اس سے پہلے دونوں ٹانگوں سے محروم کرنے والے بھی ظالم اسرائیلی فوجی ہی تھے جنہوں نے اس کی دونوں ٹانگوں میں گولیاں مار کر انہیں ناکارہ کر دیا تھا ۔ اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے چار مزید فلسطینی بھی شہید ہوئے جبکہ ڈیڑھ سو سے زائد زخمی ہوئے۔

مزید : بین الاقوامی