حکومت کا پبلک سیکٹر ڈویلپمنٹ پروگرام ”پلس“ متعارف کرانے کا فیصلہ 

  حکومت کا پبلک سیکٹر ڈویلپمنٹ پروگرام ”پلس“ متعارف کرانے کا فیصلہ 

  



 اسلام آباد (نیوز ایجنسیاں)وزیر اعظم عمران خان کی ہدایت پر پبلک سیکٹر ڈویلپمنٹ پروگرام میں نجی شعبے کی شمولیت کیلئے پی ایس ڈی پی پلس متعارف کرانے کا اصولی فیصلہ کرلیا گیا۔وزیراعظم آفس کے مطابق ترقیاتی اخراجات کے نتیجے میں جی ڈی پی کو 6.7 فیصد تک بڑھایا جا سکے گا، منصوبے کے تحت مختلف شعبوں میں 53 بڑے منصوبوں کی نشاندہی کرلی گئی ہے جس میں بحری امور، ہوابازی، لاجسٹک، انرجی، سیاحت، آئی ٹی، رئیل اسٹیٹ، انفراسٹرکچر، اور سوشل سیکٹر کے شعبے شامل ہیں۔وزیراعظم آفس کے مطابق ترقیاتی منصوبوں کا کل تخمینہ تقریبا 5.5 کھرب روپے لگایا گیا ہے، منصوبوں کو آئندہ 3 سالوں میں مکمل کیا جا سکتا ہے، منصوبوں کی تکمیل کے لئے حکومت کے جانب سے محدود مالی وسائل درکار ہوں گے جب کہ ضرورت پڑنے پر قوانین اور قواعد و ضوابط میں ترمیم بھی کی جائے گی۔اس منصوبوں پر عمل درآمد کے نتیجے میں 3.1کھرب روپے کی براہ راست سرمایہ کاری ہوگی جب کہ 1.1 کھرب روپے سالانہ نان ٹیکس ریونیو اور 91 ارب روپے ٹیکسوں کی مد میں وصول ہوں گے۔ترقیاتی منصوبوں میں اضافے سے معاشی عمل تیز اور نوجوانوں کے لئے نوکریوں کے زیادہ سے زیادہ مواقع پیدا کیے جاسکتے ہیں، وزارتِ منصوبہ بندی کے تخمینوں کے مطابق 2738 ارب روپے کے ترقیاتی اخراجات کے نتیجے میں جی ڈی پی کو 6.7 فیصد تک بڑھایا جا سکتا ہے۔وزارتِ منصوبہ بندی کے تخمینوں کے مطابق 2738 ارب  روپے کے ترقیاتی اخراجات کے نتیجے میں جی ڈی پی کو 6.7 فیصد تک بڑھایا جا سکتا ہے۔وزیراعظم آفس کی جانب سے جاری بیان کے مطابق پی ایس ڈی پی پلس کے تحت مختلف منصوبوں پر عمل درآمد پورے ملک میں ہوگا جب کہ پروگرام جائزے کے لئے تمام وزارتوں کو بھیج دیا گیا ہے۔

پی ایس ڈی پی

مزید : صفحہ اول