بھارت کشمیریوں کو قتل عام کر رہا ہے،ہمارے ٹیپو سلطان خاموش ہیں: سراج الحق 

  بھارت کشمیریوں کو قتل عام کر رہا ہے،ہمارے ٹیپو سلطان خاموش ہیں: سراج الحق 

  



لاہور (آن لائن) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ حکمرانوں نے سقوط ڈھاکہ سے کوئی سبق سیکھا ہوتا تو آج کشمیر کے مسئلے پر ہاتھ پہ ہاتھ دھرے نہ بیٹھے ہوتے۔5 /اگست کے بھارتی اقدام کا جواب نہ دے کر حکمرانوں نے قومی امنگوں کا خون کیا۔ بھارت کشمیریوں کا قتل عام کر رہاہے اور ہمارے حکمران جو خود کو ٹیپو سلطان کہتے ہیں، خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں۔ سیرت مصطفیؐ ہمیں اپنے کمزور اور مظلوم بھائیوں کا سہارا بننے اور متحد ہو کر ظلم کا خاتمہ کرنے کا درس دیتی ہے۔ مسلمان نہ ظلم کرتاہے اور نہ ظلم کو برداشت کرتاہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے دیر میں سیرت مصطفیؐ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ 16 دسمبر نہ صرف پاکستان بلکہ عالم اسلام کے لیے ایک تازیانے کی حیثیت رکھتاہے اور ہر سال ہمیں یہ یاد دلاتاہے کہ اگر دشمن کے مقابلے میں متحد ہو کر پوری قوت سے دشمن کا مقابلہ نہیں کرو گے تو اس کا خمیازہ تمہاری آنے والی نسلوں کو بھی بھگتنا پڑے گا۔سقوط غرناطہ کے بعد سقوط ڈھاکہ کو فراموش کرنے والے حکمرانوں نے امت کو مایوس کیا ہے۔ عالم اسلام پر بے حس اور عالمی استعماری قوتوں کے آلہ کار حکمران مسلط ہیں۔ کشمیر اور فلسطین اس وقت عالم اسلام کے سلگتے مسائل ہیں۔ 73 سال سے کشمیر میں ہنود اور فلسطین میں یہود مسلمانوں کا قتل عام کر رہے ہیں مگر مسلم حکمران خواب غفلت سے بیدار ہونے کو تیار نہیں۔ سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ نہتے افغانوں نے دنیا کی تین بڑی طاقتوں کو شکست دے کر ثابت کردیا ہے کہ اللہ پر یقین محکم ہو تو دنیا کی کوئی طاقت اسلام اور مسلمانوں کا مقابلہ نہیں کر سکتی۔ امریکی صدر ٹرمپ بھی رات کے اندھیرے میں افغانستان کا دورہ کرتاہے۔ انہوں نے کہاکہ 22 دسمبر کو ملک بھر سے لاکھوں لوگ اسلام آباد کشمیر مارچ میں شریک ہوکر بے ضمیر حکمرانوں کے ضمیر کو جھنجھوڑنے اورانہیں جگانے کی کوشش کریں گے۔ انہوں نے کہاکہ قوم کسی قیمت پر سقوط سری نگر نہیں ہونے دے گی۔

سراج الحق 

مزید : صفحہ آخر


loading...