مولانافضل الرحمن کے کہنے سے حکومت گھر نہیں جاسکتی،سیدفخر امام

مولانافضل الرحمن کے کہنے سے حکومت گھر نہیں جاسکتی،سیدفخر امام

  



عبدالحکیم (این این آئی) کشمیر کمیٹی کے چیئرمین بزرگ سیاستدان سید فخر امام نے کہا ہے کہ حکومت اپنی مدت پوری کرے گی اور فضل الرحمن کے کہنے سے حکومت کہیں نہیں جائے گی۔کشمیر معاملے پر تمام جماعتیں متفق و متحد ہیں،بھارتی مظالم کی روک تھام اور کرفیو کے خاتمے کیلئے بھرپور اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے، اگر کشمیر کے مسئلے کو فوری حل نہ کیا گیا تو دونوں ہمسایہ ممالک میں مزید حالات خراب ہو سکتے ہیں۔ گزشتہ روز ”این این آئی“ سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر ایشو پر دنیا بھر میں بسنے والے مسلمانوں کا ہے اس ایشو پر پاکستان کی تمام جماعتیں متفق و متحد ہیں۔ انہوں نے کہاکہ،مودی کشمیر میں ہندو ازم نافذ کرناچاہتا ہے یہ مودی کی بھول ہے،انڈیا مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالی اور خلاف ورزیاں کررہا ہے،کشمیری عوام پانچ ماہ سے مسلسل قیدوبند کی صعوبتیں برداشت کررہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ کشمیر کے ایشو پر عالمی دنیا کی خاموشی افسوسناک ہے،مقبوضہ کشمیر انسانی حقوق کی پامالی کی بدترین مثال بن چکا ہے۔انہوں نے کہاکہ بھارت پر عالمی دباؤ کیساتھ ساتھ اقتصادی پابندیاں لگانا ہونگی۔ انہوکں نے کہاکہ کشمیری عوام مسلسل 130 روز سے انڈین فوج کے محاصرے میں ہیں، اشیاء خورد و نوش ادویات اور انٹرنیٹ سہولیات کی قلت برقرار ہے جسکے باعث وادی کشمیر اور جموں کے مسلم اکثریتی علاقوں میں خوف دہشت کا ماحول اور غیر یقینی کی صورتحال برقرار ہے،انسانی حقوق کی پامالی افسوسناک ہے۔

فخر امام

مزید : صفحہ آخر


loading...