سرکاری لکیروں سے ہم جدا‘ مگر دل آج بھی ایک ساتھ دھڑکتے ہیں‘ اختر مینگل

  سرکاری لکیروں سے ہم جدا‘ مگر دل آج بھی ایک ساتھ دھڑکتے ہیں‘ اختر مینگل

  



تونسہ شریف(نمائندہ پاکستان) ہم جب اپنے حق کی آواز اٹھاتے ہیں تو ہم پر غدارہونے کے فتوے لگا دیئے جاتے ہیں یہ بات بلوچستان نیشنل پارٹی کے قائدسردار اختر جان مینگل نے تونسہ میں شہدائے کوہ سلیمان کی یاد میں منعقدہ جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہی انہوں نے کہا کہ کچھ لوگ ایسے بھیہ موجود ہیں جنہیں بلوچی زبان سمجھ نہیں آتی اس لیے اردو میں بات کرونگا میں ان شہدا کو سلام پیش کرتا ہوں جنہوں نے ناموس وطن اور اپنی قوم کی حمیت(بقیہ نمبر32صفحہ12پر)

و غیرت کے لیے جان کے نذرانے پیش کیے ہیں سرکاری لکیروں نے ہمیں کاٹ کررکھ دیا ہے مگر آج یہاں کے مکینوں کے جذبے دیکھ کر لگتا ہے کہ ہمارے دل آج بھی ایک ساتھ دھڑکتے ہیں یہاں کے لوگوں کی مہرو محبت دیکھ کر دل خوش ہوا جو تھوڑی مایوسی ہوئی اسکی وجہ یہ ہے کہ جو سبز باغ دکھا کر ہمیں جدا کیا گیا تھا اسکا عشرعشیر بھی یہاں دیکھنے کو نہیں ملتا جو پسماندگی،جو محرومیت اور جو حق تلفی بلوچستان کے بلوچوں کے مقدر میں رقم کی گئی ہے وہی محرومیت و پسماندگی میں یہاں دیکھ رہا ہوں وسائل ہمارے ہیں اور مستفید دوردراز کے لوگوں کو کیا جارہا ہے کیا ہم نہیں چاہتے کہ ہماری نسلیں ترقی کریں،وہ ڈاکٹرز،انجینئرز اور پروفیسرز بنیں مگر سہولیات پر سانپ بن کر بیٹھنے والے کیا ہمیں یہ مواقع دینگے؟انہوں نے کہا کہ سی پیک کے نام پر ملک اور خصوصی طور پر بلوچستان کا سودا کیا گیا مگر بلوچستان کو دس فیصد بھی اسکے بدلے میں نہیں ملا ہم جب بھی اپنے حق کی بات کرتے ہیں ہم پر غدار ہونے کے فتوے لگا دیئے جاتے ہیں یہ زمین جہاں میں کھڑا ہوں بلوچستان کا حصہ ہے اور رہے گی ہمیں کوئی جدا نہیں کرسکتا۔ اس سے پہلے بی این پی کے جنرل سیکرٹری ڈاکٹر جہانزیب جمالدینی،نے کہا کہ اہل بلوچستان کبھی بھی ڈی جی خان،راجن پور کو بھلا نہیں سکتے ہماری جدوجہد اس خطے کو بلوچستان کا حصہ بنانا ہے،جلسے سے منظور بلوچ،سردار میر بادشاہ قیصرانی،ایڈوکیٹ صادق ترین،رؤف مینگل،عرفان رند،نذیر بلوچ،ذوالفقار بلوچ ودیگر نے بھی خطاب کرتے ہوئے شہدائے کوہ سلیمان کو خراج تحسین پیش کیا جبکہ اس موقع پرمحترمہ ڈاکٹر شہناز بلوچ، سردار اکرم خان ملغانی،سردار اعظم خان ملغانی،سردار حیات خان چاکرانی،خورشید جمالدینی،میر احمد نواز بلوچ،سردار رحمت اللہ قیصرانی،میر یعقوب مینگل،محمد ہاشم نوتیزئی،صادق خان لاشاری،سردار عبدالخالق،سردار گہرام قیصرانی و دیگر بھی موجود تھے جلسے میں بی این پی کے کارکنوں اور شہریوں نے کثیر تعداد میں شرکت کی

جدا

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...