کلاشنکوف سے مخالفین پر ڈیڑھ سالہ بچے کا حملہ، پنجاب پولیس نے مقدمہ درج کر کے نئی مثال قائم کردی

کلاشنکوف سے مخالفین پر ڈیڑھ سالہ بچے کا حملہ، پنجاب پولیس نے مقدمہ درج کر کے ...
کلاشنکوف سے مخالفین پر ڈیڑھ سالہ بچے کا حملہ، پنجاب پولیس نے مقدمہ درج کر کے نئی مثال قائم کردی

  



شیخوپورہ(ویب ڈیسک) پولیس نے نجی ہاؤسنگ سوسائٹی کے بااثر مالکان کی درخواست پر پھرتی دکھاتے ہوئے ڈیڑھ سالہ بچے پر کلاشنکوف سے مخالفین پر حملہ کرنے کا مقدمہ درج کر لیا،پولیس کی جانب سے دائر درخواست میں نامزد تینوں بھائیوں کی عمریں 15 برس سے بھی کم ہیں جن میں سب سے چھوٹے بچے کی عمر ڈیڑھ سال، پھر 9 اور بڑے بچے کی عمر 12 سال ہے۔

 جیو نیوز  کے مطابق تھانا فیکٹری ایریا پولیس شیخوپورہ نے 3 کمسن خطرناک ملزموں اور ان کے باپ کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے، پولیس نے شیر خوار ڈیڑھ سالہ حماد پر کلاشنکوف رکھنے، ہنگامہ آرائی اور توڑ پھوڑ کا مقدمہ درج کیا ہے جب کہ 9 سالہ عمار پر پستول اور 12 سالہ عامر پر ڈنڈے سے حملہ آور ہونے کا الزام عائد کیا ہے۔ اس کے علاوہ پولیس نے بچوں کے باپ منظور گورایا پر بھی پستول رکھنے کا مقدمہ درج کیا ہے۔

بچوں کے والد منظور گورایا نے بتایا کہ وہ ضمانت کے لیے فیروز والا کچہری گئے تو عدالت ڈیڑھ سالہ ملزم کو دیکھ کر حیران ہو گئی۔متاثرہ فیملی نے بتایا کہ انہوں نے شیخوپورہ کی ایک نجی ہاؤسنگ سوسائٹی میں پلاٹ خریدے تھے جہاں وہ کئی سال سے گھر بنا کر رہ بھی رہے ہیں لیکن سوسائٹی مالکان انہیں زمین کے کاغذات نہیں دے رہے، وہ کاغذات مانگتے ہیں تو مقدمات میں الجھا دیا جاتا ہے۔

رپورٹ کے مطابق متاثرہ فیملی نے بتایاکہ انہوں نے لاہور پریس کلب کے سامنے احتجاج بھی کیا لیکن پولیس اُلٹا اُن پر ہی جھوٹے مقدمات درج کر رہی ہے۔اس پورے معاملے پر متاثرہ فیملی نے تنگ آکر حکومت سے انصاف فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /شیخوپورہ