”سپریم کور ٹ کے فیصلے میں آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کے خلا ف بھی بات کی گئی “سینئر صحافی سہیل وڑائچ نے فیصلے کی حیران کن تشریح کردی

”سپریم کور ٹ کے فیصلے میں آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کے خلا ف بھی بات کی ...
”سپریم کور ٹ کے فیصلے میں آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کے خلا ف بھی بات کی گئی “سینئر صحافی سہیل وڑائچ نے فیصلے کی حیران کن تشریح کردی

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )سینئر صحافی اور معروف تجزیہ کار سہیل وڑائچ نے کہا ہے کہ آرمی چیف کی مدت ملازمت سے متعلق سپریم کورٹ کے فیصلے میں قانونی رہنمائی فراہم کی گئی ہے لیکن مجھے اس فیصلے میں قانونی رہنمائی کے علاوہ ایک اور چیز نظر آرہی ہے ،سپریم کورٹ نے فیصلے میں صرف قانونی رہنمائی ہی نہیں کی بلکہ اس فیصلے کی تشریح سے لگتا ہے کہ جیسے سپریم کورٹ نے مدت ملازمت میں توسیع کے خلاف بات کی ہو ،انہوں نے مدت ملازمت میں توسیع کو روکنے کی بات نہیں کی لیکن اس بات کی حوصلہ افزائی بھی نہیں کی ۔سہیل وڑائچ نے کہا کہ اس فیصلے کا ایک قانونی پہلو ہے اور ایک سیاسی پہلو ہے ،جو آنے والے دنوں میں نظر آئے گا ۔اب گیند پارلیمنٹ کی کورٹ میں ہے ،قانون سازی کے امور چاہے ایکٹ آف پارلیمنٹ کے ذریعے سر انجام دئیے جائیں یا پھر آئین میں ترمیم کی جائے ،یہ معاملہ سیاسی رنگ اختیار کرے گا ۔انہوں نے کہا کہ اس معاملے پر سیاسی بحث دلچسپ ہو گی ،اب دیکھنا ہے کہ آج کی اسمبلی اس معاملے کو اسی طرح دیکھتی ہے جیسے 1973کی اسمبلی دیکھتی تھی ۔سینئر صحافی نے مزید کہا کہ جب ریس شروع ہو تی ہے تو دو تین کھلاڑی اکڑ جاتے ہیں اور اس معاملے پر بھی اکڑ کر کھڑے ہونگے ،وہ کچھ نہ بھی کر سکے تو سویلین بالا دستی کی بات ضرور کریں گے ۔

مزید : قومی