زہریلا ترین انسان ؟ اپنی ہوا کی بدبو سے 6 میٹر دور تک کے مچھروں کو ماردینے والا آدمی ، خبروں کی حقیقت سامنے آگئی

زہریلا ترین انسان ؟ اپنی ہوا کی بدبو سے 6 میٹر دور تک کے مچھروں کو ماردینے ...
زہریلا ترین انسان ؟ اپنی ہوا کی بدبو سے 6 میٹر دور تک کے مچھروں کو ماردینے والا آدمی ، خبروں کی حقیقت سامنے آگئی

  



کمپالا (ڈیلی پاکستان آن لائن) گزشتہ کئی روز سے یہ خبریں گردش کر رہی ہیں کہ یوگنڈا سے تعلق رکھنے والا ایک آدمی اپنی ہوا کی بدبو سے 6 میٹر دور تک کے مچھروں کو مار دیتا ہے اور اتنی زہریلی گیس خارج کرنے والے کو ایک کمپنی نے نوکری پر رکھ لیا ہے تاکہ اس کی ہوا کی جانچ کرکے مچھر مارنے والی نئی ادویات تیار کی جاسکیں، کئی روز سے جاری ہنگامے کے بعد اب ان خبروں کی حقیقت سامنے آگئی ہے۔

برطانوی اخبار مرر کے مطابق 48 سالہ ’جوئی روامی راما ‘ جولائی کے مہینے میں کانگو کے دارالحکومت کنشاسا میں اپنے میڈیکل چیک اپ کیلئے گئے تھے، اسی دوران ان کی تصویر اتاری گئی تھی۔ ان کے طبی معائنے کے دوران لی گئی تصویر کو ایک مزاحیہ مواد چھاپنے والی ویب سائٹ نے استعمال کیا اور دعویٰ کیا کہ یہ شخص 6 میٹر دور تک کے مچھروں کو اپنی گیس سے مار دیتا ہے۔یہ خبر مزاح کے طور پر پیش کی گئی تھی لیکن بہت سے لوگوں نے اسے حقیقت سمجھ لیا اور اس ’کرشماتی شخصیت‘ کو دنیا بھر میں مشہور کردیا۔

جب جوئی کے حوالے سے خبر وائرل ہوئی تو اس کے بارے میں مختلف نیوز آﺅٹ لیٹس نے تحقیقات کیں اور اصل حقیقت کا پتا لگالیا۔ان کے بارے میں یہ دعویٰ بھی کیا جاتا رہا کہ ان کا تعلق یوگنڈا سے ہے اور ان کی ’خطرناک شکتی‘ کا پتا لگتے ہی ایک ادویہ ساز کمپنی نے انہیں نوکری پر رکھ لیا ہے لیکن اب یہ بات واضح ہوگئی ہے کہ جوئی کا تعلق یوگنڈا سے نہیں بلکہ ڈیمو کریٹک ریپبلک آف کانگو سے ہے اور ان میں ایسی کوئی خاصیت نہیں ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...