فحش فلموں کے بعد کانوں کے ذریعے جنسی تسکین کا شرمناک طریقہ متعارف کروادیا گیا

فحش فلموں کے بعد کانوں کے ذریعے جنسی تسکین کا شرمناک طریقہ متعارف کروادیا گیا
فحش فلموں کے بعد کانوں کے ذریعے جنسی تسکین کا شرمناک طریقہ متعارف کروادیا گیا

  



نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) فحش فلموں کی لت ہی نوجوان نسل کو اخلاق باختہ بنانے کے لیے کچھ کم نہ تھی کہ اب شہوت انگیز آڈیو کہانیاں دنیا میں تیزی سے مقبول ہو رہی ہیں۔ڈیلی سٹار کے مطابق حالیہ سالوں میں شہوت انگیز کہانیوں کی پسندیدگی کی شرح تیزی سے بڑھی ہے اور لگ رہا ہے کہ روایتی فحش فلموں سے زیادہ لوگ ان فحش آڈیوز کو پسند کرنے لگے ہیں اور اس انڈسٹری میں ایک انقلاب آنے جا رہا ہے۔

ماہرین کے مطابق فحش آڈیوز کی مقبولیت کی ایک بڑی وجہ یہ ہے کہ لوگ انہیں دفتر آتے جاتے، ہوٹل میں بیٹھے ہوئے یا کہیں بھی سن سکتے ہیں۔ کچھ فحش پوڈکاسٹس مزاحیہ رنگ میں نشر کی جا رہی ہیں جیسا کہ ’مائی ڈیڈ روٹ اے پورنو‘ (My Dad Wote A Porno)اور کچھ معلوماتی پہلو لیے ہوتی ہیں جیسا کہ ’گرلز آن پورن‘ (Girls on porn)۔ بریونی کول نامی ایک ماہر کا کہنا تھا کہ ”2025ءتک دنیا میں خواتین مردوں سے زیادہ روبوٹس کے ساتھ جنسی تعلق قائم کیا کریں گی۔ اسی طرح 2025ءتک لوگ روایتی فحش فلموں سے زیادہ ان فحش آڈیوز کو سنا کریں گے۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس