”سپریم کورٹ کا فیصلہ پارلیمنٹ کا ٹیسٹ ہے“مظہر عباس نے واضح کردیا

”سپریم کورٹ کا فیصلہ پارلیمنٹ کا ٹیسٹ ہے“مظہر عباس نے واضح کردیا
”سپریم کورٹ کا فیصلہ پارلیمنٹ کا ٹیسٹ ہے“مظہر عباس نے واضح کردیا

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)تجزیہ کار مظہر عباس نے کہاہے کہ آرمی ایکٹ میں ترمیم کریں یا قانون سازی کریں، یہ ایک حساس ایشوہے ، سپریم کورٹ کا تاریخی فیصلہ پارلیمنٹ کاٹیسٹ ہے کہ وہ کیسا قانون بناتی ہے؟

جیونیوز کے پروگرام ”رپورٹ کارڈ“میں گفتگو کرتے ہوئے مظہرعباس نے کہا کہ آرمی ایکٹ میں ترمیم کریں یا قانون سازی کریں، یہ ایک حساس ایشوہے اور اس کو اتفاق رائے سے کرنا ہوگا ۔انہوں نے کہاکہ سپریم کورٹ کا تاریخی فیصلہ پارلیمنٹ کاٹیسٹ ہے کہ وہ کیسا قانون بناتی ہے اورکیا ارکان پارلیمنٹ ایک بہتر قانون کی طرف جا سکتے ہیں جس سے یہ مسئلہ حل ہوسکتا ہے ؟

مظہر عباس کا کہنا تھا کہ اب اگر ارکان نے سنجیدگی دکھانی ہے تو یہ وزیر اعظم سے شروع گی ، وہ سنجیدہ ہوکربیٹھیں اوراس مسئلہ پر قانون سازی کریں ،ہر وقت لڑائی جھگڑے نہیں چلتے ۔ انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ میں بحث توہو ، اس کے لئے ایک اچھی بحث کی ضرورت ہے تاکہ پارلیمنٹ کی بالادستی ثابت ہو اور پتہ چلے کے پارلیمان پارلیمان ہوتی ہے ۔

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور


loading...