گولی لگنے سے زخمی شخص کے علاج سے انکار پر سب انسپکٹر کا ساتھیوں سمیت نجی ہسپتال کے عملے پر تشدد، لیڈی ڈاکٹر کو تھپڑ جڑ دیا

گولی لگنے سے زخمی شخص کے علاج سے انکار پر سب انسپکٹر کا ساتھیوں سمیت نجی ...
گولی لگنے سے زخمی شخص کے علاج سے انکار پر سب انسپکٹر کا ساتھیوں سمیت نجی ہسپتال کے عملے پر تشدد، لیڈی ڈاکٹر کو تھپڑ جڑ دیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

شیخوپورہ (ویب ڈیسک) قانون کے رکھوالے خود ہی قانون سے کھلواڑ کرنے لگے ہیں اور گولی لگنے سے زخمی ہونیوالے شخص کا علاج کرنے سے انکارکرنے پر سب انسپکٹر اور ساتھیوں نے لیڈی ڈاکٹر سمیت ہسپتال عملے کو تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔

"دنیا نیوز" کے مطابق   فیروز والا کے تھانہ فیکٹری ایریا میں نامعلوم افراد نے ایک شخص کو گولی مار کر زخمی کر دیا جس کا علاج کروانے سب انسپکٹر طاہر اسے نجی ہسپتال لے گیا، ہسپتال کے عملے نے پولیس کیس بول کر علاج کرنے سے منع کر دیا۔ ہسپتال کے عملے کی طرف سے منع کرنے پر  سب انسپکٹر آپے سے باہر ہو گیا اور ڈیوٹی پر موجود لیڈی ڈاکٹر کو تھپڑ رسید کر دیا، سب انسپکٹر طاہر تھپڑ پر ہی راضی نہ ہوا بلکہ اس نے اپنے دیگر10 ساتھیوں کے ساتھ مل کر عملے کو بھی تشدد کا نشانہ بنایا۔

ہسپتال انتظامیہ کا کہنا ہے کہ سب انسپکٹر طاہر زخمی شخص کی ٹانگ سے گولی نکلوانے آیا تھا، پولیس کیس تھا جس کا سرکاری ہسپتال میں علاج ہونا تھا، ملوث افراد کیخلاف کارروائی کیلئے درخواست دے دی مگر ایس ایچ او نے مقدمہ درج کرنے سے انکار کر دیا۔