لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں سرجیکل آلات و ادویات کی کمی، تنخواہوں میں تاخیر پر سینئر ڈاکٹرز مستعفی

لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں سرجیکل آلات و ادویات کی کمی، تنخواہوں میں تاخیر پر ...
لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں سرجیکل آلات و ادویات کی کمی، تنخواہوں میں تاخیر پر سینئر ڈاکٹرز مستعفی
سورس: File Photo

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

پشاور (آئی این پی ) صوبے کے سب سے بڑے تدریسی لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں غیریقینی صورتحال ہے جہاں سرجیکل آلات و ادویات کی کمی اور  تنخواہوں میں تاخیر کے باعث مختلف شعبہ جات کے سینئر ڈاکٹرز مستعفی ہوگئے۔ صوبے کے سب سے بڑے تدریسی لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں فنڈز کی عدم فراہمی، سرجیکل آلات و ادویات کی کمی، تنخواہوں میں تاخیرکے باعث اور دیگر مسائل کے سبب مختلف شعبہ جات کے سینئرز ڈاکٹرز گزشتہ 3 ماہ کے دوران مستعفی ہوگئے ہیں۔ استعفی دینے والے سینئرز ڈاکٹرز میں انچارج شعبہ پیڈیاٹرک کارڈیک سرجری ڈاکٹر طارق سہیل، انچارج شعبہ ای این ٹی ڈاکٹر طاہر محمد اور انچارج شعبہ پیڈ سرجری ڈاکٹر فاروق عبداللہ شامل ہیں۔

ڈاکٹر طارق سہیل صوبے بھر میں بچوں کے واحد پیڈیاٹرک کارڈیک سرجن تھے جو کہ اس وقت سعودی عرب میں ہسپتال میں خدمات انجام دے رہے ہیں جب کہ ڈاکٹر طاہر محمد گردن اور ہیڈ کیکینسر میں مبتلا مریضوں کا علاج کرتیتھے اور انہوں نے اسلام آباد کے نجی ہسپتال میں ملازمت اختیار کرلی ہے۔ ادھر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے 2021 میں بیرون ملک نوکری چھوڑکر ایل آر ایچ میں ڈیوٹی شروع کی۔ ڈاکٹرز کے مطابق ہسپتال میں غیریقینی صورتحال، سرجیکل آلات و ادویات کی کمی، تنخواہوں میں تاخیر کے باعث مستعفی ہوئے ہیں۔ دوسری جانب لیڈی ریڈنگ ہسپتال کے ترجمان کا کہنا ہے کہ ہسپتال میں ڈاکٹرز کی کمی کو پورا کیا جائے گا۔