حکومتی کمیٹی طالبان کے تمام گروپوں کے اتحاد کا مطالبہ کرے،عسکری ماہرین

حکومتی کمیٹی طالبان کے تمام گروپوں کے اتحاد کا مطالبہ کرے،عسکری ماہرین

لاہور(انوسٹی گیشن سیل) حکومتی کمیٹی طالبان کے تمام گروپوں کے اتحاد کا مطالبہ کرے،تحریک طالبان گروپ سے مذاکرات امن کی طرف ایک قدم ہو گا۔ طالبان کے تمام گروپوں کو متحد کر نے کے بعد مذاکرات کرنے چاہئےں۔طالبان کا ایجنڈا مبہم ہے،حکومتی رٹ ماننے تک بات چیت کے مثبت نتائج نہیں آسکتے۔ان خیالات کا اظہار ملک کے عسکری ماہرین نے روز نامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کیاہے۔جنرل(ر)جمشید ایاز نے کہاکہ مذاکرات حکومت کے بس کی بات نہیں جب تک سیز فائر نہیں ہوتی بات چیت کامیاب نہیں ہو سکتی۔دونوں کمیٹیاں مثبت نتائج اخذ کرنے کی اہلیت نہیں رکھتیں۔طالبان کا ایجنڈا واضح نہیں کہ وہ ملکی رٹ کو بھی مانتے ہیں یا نہیں۔بات چیت کو آگے بڑھانے سے قبل طالبان کے تمام گروپوں کو متحد کرنا چاہیے ،کسی ایک گروپ سے بات چیت کا فائدہ نہیں ہے۔حکومتی کمیٹی طالبان کے متحد ہونے کا مطالبہ کرے۔سابق سر براہ آئی ایس آئی پنجاب برگیڈئیر (ر)اسلم گھمن نے کہاکہ ایک گروپ سے بات چیت کو عملی جامہ پہنانا چاہیے،مزید حالات میں بہتری لائی جا سکتی ہے۔ائیر مارشل (ر)شاہدذوالفقار نے کہاکہ ایک گروپ سے بات چیت سے امن نہیں لوٹ سکے گا بلکہ یہ قیام امن کےلئے پہلا قدم ہو گا۔ مذاکرات کی بات کرنے سے طالبان کی حقیقت سامنے آرہی ہے کہ طالبان کتنے پانی میں ہیں۔ جس سے مزید آگے بڑھنے میں حکومت کو آسانی ہو گی۔

مزید : صفحہ آخر