قانون کرایہ داری کی عدم موجودگی سے اسلام آباد مہنگا ترین شہربن چکا ‘اجمل بلوچ

قانون کرایہ داری کی عدم موجودگی سے اسلام آباد مہنگا ترین شہربن چکا ‘اجمل ...

اسلام آباد( کامرس ڈیسک) مرکزی انجمن تاجراں پاکستان کے صدر اجمل بلوچ نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے مقدمات ہیں پندرہ روز کی تاریخ دی جاتی ہے جبکہ بے دخلی کے مقدمات ہیں صرف تین روز کی تاریخ ملتی ہے جس کی وجہ سے انصاف کے تقاضے پورے نہیں کئے جاتے اور نہ ہی متاثرین کو مقدمات کی تیاری میں وقت ملتا ہے انہوں نے چیف جسٹس سپریم کورٹ سے اپیل کی کہ وہ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں سرعت اور جلد بازی میں بے دخلی کے مقدمات کی سماعت کا نوٹس لیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے جی ایٹ میں تاجروں کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے مذید کہا کہ اسلام آباد قانون کرایہ داری کی عدم موجودگی کی وجہ سے نہ صرف پاکستان کا مہنگا ترین شہر بن چکا ہے بلکہ دنیا کے مہنگے ترین شہروں کی فہرست میں شامل ہو چکا ہے اور آئیندہ متوسط اور غریب طبقہ کیلئے اسلام آبا د میں رہائش پذیر ہونا مشکل ہو جائے گا۔ اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سابق سینئر نائب صدر اور ٹریڈرز ایکشن کمیٹی اسلام آباد کے سیکرٹری خالد چوہدری نے اس موقع پر کہا کہ حکومتی ایم این اے میاں عبدالمنان اور پی ٹی آئی کے اسلام آباد سے رکن قومی اسمبلی اسد عمر نے قانونِ کرایہ داری کا ترمیمی بل اسمبلی میں جمع کر رکھا ہے لیکن ایک سال گزرنے کے باوجود اس میں کوئی پیش رفت نہیں ہوئی ہے ۔

جبکہ اس بِل پر پی پی پی کی حکومت کے وقت تمام سٹیک ہولڈرز کی پبلک ہیئرنگ بھی ضلعی انتظامیہ کرا چکی ہے۔ اسلام آباد کے تاجر انصاف نہ ملنے کی وجہ سے عدم تحفظ کا شکار ہیں وزیر اعظم میاں نواز شریف اپنے وعدہ کے مطابق فوری طور پر اسلام آباد میں منصفانہ قانون کرایہ داری نافذ کرائیں اور تاوقتیکہ تمام بے دخلیاں روکی جائیں ۔ اجتماع سے جی ایٹ آئی اینڈ ٹی سینٹر کے جنرل سیکرٹری چوہدری عبدالغفار ۔ ناصر چوہدری ۔ سعید بھٹی اور چوہدری جمیل اختر نے

مزید : کامرس