رنگ روڈ کے اطراف شجر کاری ، چھوٹے جنگلات بنانے کا فیصلہ

رنگ روڈ کے اطراف شجر کاری ، چھوٹے جنگلات بنانے کا فیصلہ

لاہور(جنرل رپورٹر)کمشنر لاہور ڈویژن و چیئرمین لاہور رنگ روڈ اتھارٹی عبداﷲ خان سنبل نے کہا ہے کہ رنگ روڈ کی سادرن لوپ ون (ایس ایل 1) اور سادرن لوپ ٹو (ایس ایل 2) پر 34 فیصد کام مکمل ہو چکا ہے جبکہ ایس ایل تھری کی تعمیر کے لیے پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ طریقہ کار کے تحت کنٹریکٹنگ کے لیے بات چیت جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ رنگ روڈ کے دونوں اطراف شجرکاری کے ساتھ ساتھ سادرن لوپ میں چھوٹے جنگلات لگائے جائیں گے جو آکسیجن پاکٹ کا کام کریں گے اور ماحول پر مثبت اثرات مرتب کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پنجاب نے ایس ایل ون اور ایس ایل ٹو کے ایف ڈبلیو او کے ساتھ پی پی پی طریقہ کار کے تحت 4.25 ارب روپے کے ذریعے 24.292 ارب روپے کا کنٹریکٹ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ رنگ روڈ سگنل فری کاریڈور میں ایس ایل کے 22.4 کلومیٹر میں 6انٹرچینجز اور 18 سب ویز بنائے جا رہے ہیں جبکہ ایس ایل تھری، اڈا پلاٹ تا ملتان روڈ میں 2انٹرچینجزبنائے جائیں گے۔چیئرمین رنگ روڈ اتھارٹی عبداﷲ خان سنبل نے ان خیالات کا اظہار ایشیائی ترقیاتی بنک کے وفد کے ساتھ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔

وفد میں مسٹر ایڈرین ٹورس پرنسپل فنانس سیکٹر سپیشلسٹ، مس ثناء مسعود فنانس اور مس صفیہ شفیق ماحولیاتی سپیشلسٹ شامل تھے جبکہ اجلاس میں لاہور رنگ روڈ اتھارٹی کے ڈائریکٹر بھی موجود تھے۔ وفد کو بریفنگ میں بتایا گیا کہ 8کلومیٹر طویل ایس ایل تھری کی تعمیر کے لیے 7.7 ارب روپے کا ابتدائی تخمینہ لگایا گیا ہے جبکہ زمین ایکوائر ہو رہی ہے اور اس کے کنٹریکٹ کے بعد اس کو 9 ماہ میں مکمل کیے جانے کا ہدف بھی رکھا گیا ہے۔ وفد کو آگاہ کیا گیا کہ رنگ روڈ اتھارٹی 2016 کے مالیاتی سال کی تکمیل سے پہلے کنٹریکٹ کرنے کی کوشش میں مصروف ہے اور معمول کے مطابق اس کے لیے بین الاقوامی سطح پر اشتہار دے گی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1