فوجی عدالتوں کے خاتمے سے دہشت گردوں کے حوصلے بلندہو ئے،صاحبزادہ حامدرضا

فوجی عدالتوں کے خاتمے سے دہشت گردوں کے حوصلے بلندہو ئے،صاحبزادہ حامدرضا

  

لاہور(وقائع نگار)سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے کہا ہے کہ فوجی عدالتوں کے خاتمے سے دہشت گردوں کے حوصلے بلندہو ئے ۔حکومت نیشنل ایکشن پلان پر عمل نہ کر کے شہداء کے خون سے بے وفائی کر رہی ہے۔سنی اتحاد کونسل پشاور دھماکے کی سخت مذمت کرتی ہے۔سیف سٹی پروجیکٹ پر اربوں روپے خرچ ہونے کے باوجود مال روڈ پر دھماکہ ہونا لمحہ فکریہ ہے۔

موجودہ نظام طاقتور اور امیر کا احتساب نہیں کر سکتا۔موجودہ حکومت ملکی تاریخ کی ناکام ترین حکومت ہے۔افغان حکومت اپنی سر زمین پر پاکستانی دہشت گردوں کی پناہگاہیں ختم کریں۔ دہشت گردی کے ناسور سے نجات کے لیے فوجی عدالتوں کی بحالی ناگزیر ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جامعہ ام رحمت اچھرہ میں سانحہ لاہور کے شہدا ء کیلئے قرآن خوانی اور زخمیوں کے لیے دعائیہ اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اجتماع سے مفتی محمد حبیب قادری ،مفتی محمد مقیم خان،راؤ حسیب احمد،حاجی رحمت علی،مفتی مسعودالرحمن اور صاحبزادہ معاذالمصطفےٰ قادری نے بھی خطاب کیا۔صاحبزادہ حامد رضا نے مزید کہا کہ حکومت نیشنل ایکشن پلان پر عمل کے لیے مخلص اور سنجیدہ نہیں ۔ دہشت گردی کی تازہ لہر حکومت کی غفلت،سستی اور نا اہلی کا نتیجہ ہے۔کرپشن کی وکالت کرنے والے وزراء قومی مجرم ہیں۔نیب کو ختم کرکے ایسا احتساب کمیشن بنایا جائے جس میں فوج ، خفیہ ایجنسیوں کے نمائندے اور سپریم کورٹ کے ججز بھی شامل ہوں۔موجودہ حکمران عوامی ٹیکس سے بنا ہر منصوبہ تحفہ قرار دیتے ہیں حالانکہ تحفہ اپنی جیب سے دیا جاتا ہے۔کوئٹہ جس بیوروکریٹ کے گھر سے اربوں روپے نکلے تھے وہ بھی قطری شہزادے کا خط لا سکتا ہے۔قطری شہزادے کا خط پنامہ زدہ حکمرانوں کو بچا نہیں سکتا ۔حکمران دہشت گردی کے ناسور کوکچلنے کے لیے مؤثر اقدامات کریں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -