جماعت اسلامی ایک واضح فکر اور نظریہ کی حامل جماعت ہے ، امیر العظیم

جماعت اسلامی ایک واضح فکر اور نظریہ کی حامل جماعت ہے ، امیر العظیم

لاہور( وقائع نگار)جماعت اسلامی پاکستان کے ترجمان و مرکزی سیکریٹری اطلاعات امیر العظیم نے وزیراعظم پاکستان کے معاون خصوصی آصف کِرمانی اورمسلم لیگ( ن) آزاد کشمیرکے بعض رہنماؤں و حکومتی عہدیداروں کے بے سروپا بیانات پر شدید حیرت کا اظہار کرتے ہوئے انھیں حقائق کیخلاف قراردیا ہے۔انھوں نے کہا کہ جماعت اسلامی ایک واضح فکر اور نظریہ کی حامل جماعت ہے۔

جِس کو بددیانت لوگوں کی بیساکھیوں کی ضرورت ہے نہ ہی اسکا امیر دو کشتیوں میں سوار ہے۔ امیر العظیم نے کہا کہ جماعت اسلامی آزاد کشمیر کا پاکستان کی جماعت سے کوئی تنظیمی تعلق نہیں انکا الگ سے امیر وشوریٰ اور ادارے موجود ہیں۔ وہ اپنے فیصلے ہم سے پوچھ کر نہیں کرتے۔ آزاد کشمیر کے گزشتہ انتخابات میں بھی آزاد کشمیر جماعت اسلامی نے مسلم لیگ ن آزاد کشمیر کو انتخابات میں ووٹ دیے تھے جس کے بدلے کشمیر جماعت کو دو مخصوص نشستیں دی گئیں۔ مطلب پورا ہونے کے بعد اِسے بھیک یا بیساکھیاں قرار دینا حقائق پر پردہ ڈالنے کے مترادف ہے۔ امیر العظیم نے کہا کہ انتخابی ایڈجسٹمنٹ کے حوالے سے سب امور راجہ فاروق حیدر اور عبدالرشید ترابی کے درمیان طے پائے کوئی ایک ایسااجلاس بھی نہیں جس میں مسلم لیگ کے قائد میاں نواز شریف اور امیر جماعت سراج الحق شریک ہوئے ہوں۔ جب مسلم لیگ کے راہنماوں نے سب امور وہاں کے امیر عبدالرشید ترابی سے طے کئے تو وہ آج کِس منہ سے سیٹوں کی واپسی کا مطالبہ پاکستان جماعت کے امیر سراج الحق سے کرتے ہیں۔جماعت کے ترجمان نے کہا کہ درحقیقت پاکستان جماعت کے امیر کی کرپشن کیخلاف مقبول اور عوامی حلقوں میں پذیرائی کی حامل مہم سے زِچ ہو کر مسلم لیگی راہنما ذہنی توازن اور یاد داشت سے محروم ہو کر امیر جماعت پر الزام تراشی کر رہے ہیں جو قابل مذمت ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1