ٹرمپ کو جنرل فلن کے معاملے کا کئی ہفتوں سے پتا تھا،وائٹ ہاؤس

ٹرمپ کو جنرل فلن کے معاملے کا کئی ہفتوں سے پتا تھا،وائٹ ہاؤس

  

واشنگٹن(این این آئی)وائٹ ہاؤس نے کہاہے کہ امریکی حکام اور عوام کو گمراہ کرنے کے بعد صدر ٹرمپ کے مشیر برائے قومی سلامتی مائیکل فلن کو معلوم تھا کہ انھیں اپنا عہدہ چھوڑنا ہی ہوگا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ایک بیان میں وائٹ ہاؤس کے ترجمان شان سپائسر نے کہاکہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو جنرل فلن کی روسی سفیر کے ساتھ بات چیت کے معاملے کا کئی ہفتوں سے علم تھا۔ان کا کہنا تھا کہ گذشتہ ماہ کے آخر میں وزارتِ قانون نے صدر ٹرمپ کو بتایا تھا کہ ممکن ہے جنرل فلن نے امریکی حکام سے جھوٹ بولا ہو۔شان سپائسر کا کہنا تھا کہ ٹرمپ انتظامیہ کا اب بھی یہی موقف ہے کہ جنرل فلن نے کچھ غلط نہیں کیا اور انھیں صرف اعتماد کو ٹھیس پہنچانے کی وجہ سے نکالا گیا ہے۔وائٹ ہاؤس کے ترجمان شان سپائسر نے اس بارے میں اپنی بریفنگ میں کہا کہ صدر ٹرمپ نے جنرل فلن سے استعفیٰ اس لیے مانگا کیونکہ ان کے اعتماد کو ٹھیس پہنچی تھی۔

مزید :

عالمی منظر -