عمران خان کے جھوٹ سے لوگ بیزار اور جج بیمار ہوتے جارہے ہیں ،مسلم لیگ (ن)

عمران خان کے جھوٹ سے لوگ بیزار اور جج بیمار ہوتے جارہے ہیں ،مسلم لیگ (ن)

  

 اسلام آباد(اے این این )مسلم لیگ (ن) کے رہنماؤں نے کپتان کوآڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہاہے کہ عمران خان احمقوں کی جنت میں نہ رہیں ،ان کے جھوٹ سے لوگ بیزار اورجج بیمار ہوتے جا رہے ہیں، وزیر اعظم نے بیرون ملک جو بھی جائیداد خریدی اس کا مکمل ریکارڈ موجود ہے ، چیئرمین تحریک انصاف پاناما کیس کو سیاسی بیساکھی کی طرح استعمال کرنا چاہتے ہیں ، وہ الیکشن کمیشن میں پیشی سے استثنیٰ مانگتے اور روز سپریم کورٹ میں حاضری دیتے ہیں،خود کرپشن کرنے والے پاکستان کو ایمانداری کا درس دے رہے ہیں،جہانگیر ترین نے مالی اور باورچی کے ذریعے اربوں روپے کا کاروبار کیااحتساب سے بچ نہیں سکتے ، شاہ محمود درباروں کا پیسہ کھاتے ہی اور زمین کا ٹیکس بھی نہیں دیتے ،شیخ رشید کی سیاسی موت کا سبب ان کا لال مفلر ہوگا۔بدھ کوپاناپیپرزسے متعلق مقدمے کی سماعت کے بعدسپریم کورٹ کے باہرصحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر مملکت اطلاعات ونشریات مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران خان الیکشن کمیشن میں پیشی سے استثنیٰ مانگتے اورروز سپریم کورٹ میں حاضری دیتے ہیں ،عمران خان نے کہا آج پتا چل رہا ہے کہ فلیٹس 2006 میں خریدے گئے ، عمران خان کے بیانات پر حیرت ہوتی ہے ، وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف نے جو فلیٹس خریدے ان کا ریکارڈ ہے ،پی ٹی آئی نے ایک بھی کاغذنہیں دیاجوشریف فیملی کے شواہدکیخلاف ہو دراصل عمران خان پاناما کیس کو سیاسی بیساکھی کی طرح استعمال کرنا چاہتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ آج سے تین برس قبل جب مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے اقتدار سنبھالا اس وقت ملک میں دہشت گردی کا بازار گرم تھا آج ہماری کوششوں سے ملک میں امن بحال ہو رہا ہے جس کا کریڈٹ وزیر اعظم نواز شریف کو جاتا ہے ۔انہوں نے کہاکہ نیشنل ایکشن پلان کے مثبت نتائج آرہے ہیں، ضرب عضب کے باعث دہشت گردی کے واقعات میں کمی آئی ہے ۔انہوں نے کہاکہ ساڑھے تین سال سے دہشت گردی کے خلاف جنگ لڑی جا رہی ہے بزدل دہشت گرد ہمارے حوصلے کمزور نہیں کر سکتے دہشت گردی کے ایک بھی واقعے تک جنگ جاری رہے گی۔ انہوں نے کہاکہ دہشت گردی کے مسئلے پر سیاست نہ کی جائے۔وزیرمملکت برائے پانی وبجلی عا بد شیر علی نے کہا کہ تحریک انصاف تمام کوششوں کے باوجود ثبوت جمع نہیں کراسکی۔وزیراعظم نواز شریف نے عدالتوں کا ہمیشہ احترام کیاہے ہم اپنی سیاسی جنگ بھی جیتیں گے اور قانونی جنگ میں بھی سرخرو ہوں گے۔ انہوں نے کہاکہ جب میاں نواز شریف کے دورمیں منصوبے شروع ہوتے ہیں اور پاکستان خوشحالی کی طرف جاتا ہے تو ان لوگوں کو تکلیف شروع ہوجاتی ہے۔انہوں نے کہاکہشاہ محمودقریشی صاحب غریب بن کر لوگوں سے پیسے بٹورتے ہیں ہم اپنی نسلوں کا جواب دے رہے ہیں، شاہ محمود حساب دیں گے کہ وہ سالانہ کروڑوں روپے لوگوں سے بٹورتے ہیں ، ،شاہ محمود زمین کا ٹیکس بھی نہیں دیتے ، درباروں کا پیسہ کھاتے ہیں۔ انہوں نے شیخ رشید کو بھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ خیراگلی سے لیکر اسلام آباد تک شیخ رشید کی زمین بے نامی ہے ۔شیخ رشید کی سیاسی موت کا سبب ان کا لال مفلر ہوگا۔ کیڈکے وزیرمملکت طارق فضل چوہدری نے کہا کہ مخالفین کبھی حقائق کوتوڑمروڑ کے پیش کررہے ہیں ۔کبھی عدالت کو کہاجاتا ہے کہ آپ پر بہت بڑی ذمہ داری ہے۔ہر جج جانتا ہے کہ فیصلے کہ دوررس نتائج مرتب ہوں گے ۔ مسلم لیگ(ن) کے رہنما ء طلال چودھری نے کہا کہ عمران خان کا کیریئر ٹمپرنگ سے بھرا ہوا ہے اور وہ سیاست میں بھی ٹمپرنگ کر رہے ہیں اور پاناما کیس جھوٹ ٹمپرنگ سے جیتنا چاہتے ہیں، عمران خان کے 120 دن کے دھرنے سے ملک کو کیا فائدہ ہوا ،سپریم کورٹ سے فیصلہ آئین اورقانون کے مطابق آئے گا ،عمران خان احمقوں کی جنت میں نہ رہیں ،ان کے جھوٹ سے لوگ بیزار اورجج بیمار ہوتے جا رہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ اپوزیشن کا کام تنقید کرنا ہے لیکن تنقید تعمیری ہونی چاہیے لاہور واقعہ پرعمران خان نے سیاسی پوائنٹ اسکورنگ کی ،لوگوں کی تدفین نہیں ہوئی کہ انہوں نے پنجاب حکومت پر تنقید کی ۔ انہوں نے کہاکہ ہمیں اپنی فورسز کے حوصلے بڑھانے ہیں، دھماکے پر پوائنٹ اسکورنگ نہ کی جائے ۔انہوں نے کہاکہ ہمیں پنجاب پولیس پر فخر ہے جس نے تین سال میں جتنے لوگ پکڑے تین صوبوں سے بھی زیادہ ہیں، ملک سے 80 فیصد دہشت گردی کا خاتمہ کردیا گیا ہے اورباقی 20 فیصد جنگ بھی فورسز اورپاکستانی قوم مل کرجیتے گی۔ مائزہ حمید نے کہا کہ عمران خان آپ منی لانڈرنگ کیس سے فرارہوگئے ہیں ۔تحریک انصاف کے بانی رکن نے آپ پر الزام لگایا،آپ بیرونی فنڈنگ سے متعلق منی ٹریل کیوں نہیں دیتے ؟۔ ادھر الیکشن کمیشن کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگی رہنمادانیال عزیز نے کہا کہ عمران خان اور جہانگیر ترین احتساب سے نہیں بھاگ سکتے،خود کرپشن کرنے والے پاکستان کو ایمانداری کا درس دے رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ عمران خان کے وکیل بہانہ کرکے عدالت سے بھاگ گئے۔گیند کے پیچھے بھاگنے والے آج سیاست کے پیچھے بھاگ رہے ہیں۔عمران خان آئینی اداروں کی تذلیل کرنا اپنا فن سمجھتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جہانگیر ترین نے مالی اور باورچی کے ذریعے اربوں روپے کا کاروبار کیا۔

مزید :

علاقائی -