19بینکوں نے خود ہی 4.65ارب کے قرضے معاف کئے، حکومت کا سینیٹ میں جواب

19بینکوں نے خود ہی 4.65ارب کے قرضے معاف کئے، حکومت کا سینیٹ میں جواب

  

اسلام آباد ( ما نیٹر نگ ڈیسک)21 بینکوں کی 2200 اسلامی شاخیں ہیں۔ پچھلے 3 سالوں کے دوران زرعی ترقیاتی بینک نے 27 کروڑ 2 لاکھ روپے کے قرضے فراہم کئے۔ سینیٹ میں وقفہ سوالا ت کے دوران حکومت کی طرف سے بتایا گیا کہ 34 بینکوں میں سے 19 بینکوں نے مارچ 2010 سے فراہم کیے گئے قرضوں میں سے 4ارب 65کروڑ 30لاکھ روپے کے قرضے معاف کئے ہیں۔ عالمی طور پر بینکوں کا قرض معاف کرنا قرض دینے کی کارروائی کا حصہ ہے ، یونائیٹڈ بینک کو 97کروڑ ، سٹینڈرڈ چارٹرڈ کو 81کروڑ، این آئی بی بینک کو 44کروڑ روپے اور بینک اسلامی کو54کروڑ روپے کا نقصان ہوا۔وزیر قانون زاہد حامد نے بتایا کہ دنیا بھر میں بینکوں سے قرضے معاف کرنا قرضے دینے کی کارروائی کا حصہ ہے۔ یہ قرضے حکومت نہیں بینکو ں نے خود معاف کئے ہیں۔ 21 بینکوں کی 2200 اسلامی شاخیں ہیں۔ پچھلے 3 سالوں کے دوران زرعی ترقیاتی بینک نے 27 کروڑ 2 لاکھ روپے کے قرضے فراہم کئے۔موجودہ دورحکومت میں نجکاری سے ایک کھرب 72 ارب روپے سے زائد حاصل ہوئے ہیں۔ زاہد حامد نے کہا کہ شادی ہالز تین قسم کے ٹیکس دیتے ہیں۔ رواں مالی سال کے دوران دسمبر 2016 تک انکم ٹیکس، ود ہولڈنگ ٹیکس کی مد میں اسلام آباد کے شادی ہالز نے 42.329 ملین روپے جمع کر ائے ہیں۔سائنس و ٹیکنالوجی کے وزیر رانا تنویر نے بتایا کہ 30 ستمبر 2016ء کے بعد سے ڈبہ پیک دودھ کی مانیٹرنگ شروع کر دی گئی ہے۔ غیر معیاری کمپنیوں کو سیل بھی کریں گے۔ احسن اقبال نے بتایا کہ سی پیک کے تحت منصوبوں کے لئے سرمایہ کاری کی رقم 47957 ملین ڈالر ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -