وزیراعلیٰ صبح سے شام تک شہداء کے لواحقین کے ساتھ رہے

وزیراعلیٰ صبح سے شام تک شہداء کے لواحقین کے ساتھ رہے

  

ساہیوال،اوکاڑہ،قصور،رینالہ خورد (نمائندگان) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے3اضلاع ساہیوال،اوکاڑہ اورقصور کی چار تحصیلوں میں جاکرلاہوردھماکے میں جاں بحق ہونے والے پولیس شہداء کے لواحقین کے ساتھ ملاقات کی اوران کے ساتھ مکمل یکجہتی کااظہار کیا۔وزیراعلیٰ صبح سے شام تک شہداء کے لواحقین کے ساتھ رہے اوران کے ساتھ دیر تک بیٹھ کرباتیں کیں اوران کے حوصلے کو سراہا۔وزیراعلیٰ سب سے پہلے شہید ہیڈ کانسٹیبل عصمت علی کے گھر ساہیوال گئے پھر شہید کانسٹیبل محمد ندیم کی رہائشگاہ رینالہ خورد گئے،اس کے بعددیپالپور کے نواحی گاؤں میں شہید کانسٹیبل عرفان محمودگھر گئے اورآخر میں قصور کے علاقے راجہ جنگ کے گاؤں میں شہید کانسٹیبل اسلمکی رہائشگاہ پر گئے۔ وزیراعلیٰ نے شہداء کے بچوں سے پیار کیااورانہیں گود میں بٹھا کران سے باتیں کرتے رہے اوران کیساتھ شفقت کااظہار کیا۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ شہداء ہمارا افتخار ہیں اور ہم آپ کو تنہا نہیں چھوڑیں گے اور میں اسی لئے انسپکٹر جنرل پولیس کو بھی ساتھ لایا ہوں تاکہ آپ کیساتھ کیے گئے وعدوں پر فوری عملدر آمد کیا جائے۔شہداء کے ورثا ء نے وزیراعلیٰ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آپ مشکل کی گھڑی میں ہمارے پاس آئے ہیں اور ہمارا حوصلہ بڑھایا ہے اور ہمارا ساتھ دیا ہے جسے ہم کبھی بھول نہیں سکتے،آپ کے آنے سے ہمیں بہت حوصلہ ملا ہے۔انہوں نے کہا کہ ملک و قوم کو دہشت گردی کے ناسور سے نجات دلانے کیلئے ہم بھی ہر طرح کی قربانی دینے کیلئے تیار ہیں ۔ہمارے حوصلے پست نہیں ہوئے بلکہ پہلے سے زیادہ بلند ہیں ۔ایک شہید کی بیوہ نے کہا کہ میں آپ سے ملنے کی خواہش رکھتی تھی لیکن مجھے علم نہیں تھا کہ میں آپ کو ان حالات میں ملوں گی۔میرے شہید شوہر آپ کی سکیورٹی کے فرائض بھی سرانجام دیتے رہے ہیں جس پر وزیراعلیٰ نے بیوہ کے سرپر ہاتھ رکھ کرانہیں دلاسہ دیااوریقین دلایا کہ حکومت آپ کے ساتھ کھڑی ہے اور کھڑی رہے گی۔

مزید :

صفحہ اول -