چینی انجینئرز نے کوٹوپاورپراجیکٹ پر پاورٹنل کو ریکارڈ مدت میں مکمل کرلیا

چینی انجینئرز نے کوٹوپاورپراجیکٹ پر پاورٹنل کو ریکارڈ مدت میں مکمل کرلیا

پشاور( سٹاف رپورٹر )چینی انجینئرزکی مہارت کے باعث خیبرپختونخواکے ضلع دیرلوئیر میں حکومتی وسائل سے توانائی کے دوسرے بڑے منصوبے کوٹوہائیڈروپاورپراجیکٹ،(40.8میگاواٹ) کی 2کلومیٹرپاورٹنل مقررہ مدت سے پہلے مکمل کرلی گئی ہے جبکہ منصوبے پر تیزرفتاری کے ساتھ کام جاری ہے جس کی تکمیل سے توانائی بحران پر قابوپانے کے ساتھ ساتھ صوبے کو سالانہ اربوں روپے کی آمدن ہوگی۔ موجودہ دورحکومت میں چینی ماہرین کی طرف سے صوبے میں توانائی کے دیگر منصوبوں پر بھی تیزی کے ساتھ کام جاری ہے۔ اس سلسلے میں چینی انجینئرزکی طرف سے ضلع دیر میں 40.8میگاواٹ، کوٹوہائیڈروپاورپراجیکٹ کی2کلومیٹرپاورٹنل کی پندرہ ماہ کی مقررہ مدت سے 4ماہ قبل تعمیرکئے جانے پر ایک خصوصی تقریب کا اہتمام کیا گیا ۔تقریب کی صدارت سیکرٹری توانائی وبرقیات انجینئرنعیم خان نے کی ،اس موقع پرسیکرٹری توانائی کو کوٹوہائیڈروپاورپراجیکٹ پر کام کی رفتارکے بارے میں جامع بریفنگ دی گئی۔سیکرٹری توانائی نے منصوبے کے لئے زمین کے حصول میں درپیش بعض رکاوٹوں کو فوری طورپردورکرنے کے لئے اعلیٰ فورمز پر مذکورہ مسئلہ اٹھانے پر زوردیا ۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سیکرٹری پاور انجینئرنعیم خان نے کوٹوپاورپراجیکٹ پر چینی انجینئرز کی ٹیم اور پیڈوافسران کی طرف سے پاورٹنل سمیت دیگر امور کی بہترانداز میں بجاآوری پر اطمینان کا اظہارکیا اور کہا کہ محکمہ توانائی وبرقیات سمیت توانائی منصوبوں پر کام کرنے والی کمپنیوں کی باہمی مشاورت سے باقاعدہ پلان پر چلتے ہوئے منصوبوں کی بروقت تکمیل ممکن بناناہوگی۔ انہوں نے کہا کہ توانائی منصوبوں کی تکمیل سے صوبے میں توانائی بحران پر قابوپانے کے ساتھ ساتھ معاشی انقلاب برپاہوگا۔ تقریب کے آخر میں پاورٹنل کی ریکارڈ مدت میں تکمیل پر کیک کاٹاگیاجبکہ بعد ازاں سیکرٹری توانائی نے کوٹوپراجیکٹ پر کام کا جائزہ لینے کے لئے منصوبے کی جگہ کا معائنہ بھی کیا اور مختلف تجاویز بھی دیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر