درگاہ پر سکیورٹی کے لیے صرف 2پولیس اہلکار تعینات تھے،لاشیں اور زخمی بکھرے پڑے ہیں،اٹھانے میں مشکلات درپیش ہیں:سجادہ نشین مہدی شاہ

درگاہ پر سکیورٹی کے لیے صرف 2پولیس اہلکار تعینات تھے،لاشیں اور زخمی بکھرے ...
درگاہ پر سکیورٹی کے لیے صرف 2پولیس اہلکار تعینات تھے،لاشیں اور زخمی بکھرے پڑے ہیں،اٹھانے میں مشکلات درپیش ہیں:سجادہ نشین مہدی شاہ

  

سیہون شریف (ڈیلی پاکستان آن لائن) سجادہ نشین مہدی شاہ کا کہنا ہے کہ درگاہ پر سکیورٹی کے لیے صرف 2پولیس اہلکار تعینات تھے،لاشیں اور زخمی بکھرے پڑے ہیں،اٹھانے میں مشکلات درپیش ہیں۔

دنیا نیوز کے مطابق سجادہ نشین مہدی شاہ کا کہنا ہے کہ درگاہ پر سکیورٹی کے لیے صرف 2پولیس اہلکار تعینات تھے،کافی مشکلات ہیں ،لاشیں اور زخمی بکھرے پڑے ہیں، اٹھانے میں مشکلات درپیش ہیں،جمعرات کا روز ہونے کے باعث بہت رش تھا۔

لعل شہباز قلندر کی درگاہ پر خودکش حملہ،25 افراد شہید ،100 سے زائد زخمی،قیامت صغریٰ کا منظر

مطابق پولیس کا کہنا ہے کہ حملہ آور لعل شہباز قلندر مزار کے گولڈن گیٹ سے داخل ہوا ،، ابتدائی اطلاعات کے مطابق دھماکہ خود کش تھا،مزید شہادتوں کا خدشہ ہے،زخمیوں کو قریبی ہسپتالوں میں منتقل کیا جارہا ہے،واقعہ کی تحقیقات ایمرجنسی کارروائیوں کے ساتھ ساتھ جاری ہیں۔

مزار پر سکیورٹی کی کیا صورتحال تھی ویڈیو دیکھ کر آپ کو بھی غصہ آ جائے گا

مزید : قومی