ازخود نوٹس کیسوں کے فیصلوں کیخلاف اپیل کاحق دیا جائے ، پاکستان بارکونسل

ازخود نوٹس کیسوں کے فیصلوں کیخلاف اپیل کاحق دیا جائے ، پاکستان بارکونسل

لاہور(نامہ نگارخصوصی)پاکستان بار کونسل نے مطالبہ کیا ہے کہ سپریم کورٹ میں آئین کے آرٹیکل 184 کے استعمال کے لئے پیرا میٹر ز بنائے جائیں اور ازخود نوٹس کیسوں کے فیصلوں کے خلاف اپیل کا حق دیا جائے۔لاہورمیں ہونے والے پاکستان بارکونسل کی ایگزیکٹو کمیٹی کے اجلاس میں پاکستان بارکونسل کے وائس چیئرمین سید امجد شاہ ، چیئرمین ایگزیکٹو کمیٹی شیخ ادریس اورکمیٹی کے دیگر ارکان نے شرکت کی ۔اجلاس میں مطالبہ کیا گیا کہ سو وموٹو کا اختیار کم سے کم کیا جانا ضروری ہے،سووموٹو مقدمات کی سماعت کے لئے مستقل بنچ بنایا جائے جس میں چاروں صوبوں کی نمائندگی ہو،ازخود نوٹس کیسوں میں فریقین کے پاس اپیل کا حق نہیں ہوتا،سووموٹواختیارات کا کم سے کم استعمال ہو ناچاہیے تاکہ لوگوں کا اپیل کا حق محفوظ رہے،سووموٹو نوٹس کو غیر معمولی حالات میں لیا جائے،کمیٹی نے مزید مطالبہ کیا کہ جوڈیشل کمیشن کے ایسے رولز بنائے جائیں جن سے اعلیٰ عدلیہ میں ججوں کے تقررکے حوالے سے عدم شفافیت کا تاثر ختم ہواورمستقبل میں بہتر جج سامنے آئیں ،پاکستان بار کونسل کی ایگزیکٹو کمیٹی کے ارکان نے توقع ظاہر کی ہے کہ چیف جسٹس پاکستان ان کے مطالبات کو سنجیدگی سے لیں گے،ہمارے مطالبات تعمیری اورقانون کی حکمرانی کے لئے ہیں، ان کا کہنا ہے کہ سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کے فیصلوں کے بارے میں تاریخ بتائے گی۔

پاکستان بار کونسل

مزید : علاقائی


loading...