سی ایس ایس کے پرچے لیک کرنے والے 3سرکاری ملازمین گرفتار

سی ایس ایس کے پرچے لیک کرنے والے 3سرکاری ملازمین گرفتار
سی ایس ایس کے پرچے لیک کرنے والے 3سرکاری ملازمین گرفتار

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)ایف آئی اے نے سی ایس ایس کے امتحانی پرچے آوٹ کرنے والے سرکاری ملازمین کے ایک گروہ کے 3 افراد کو گرفتار کرلیا، ملزمان میں 2 سرکاری افسران بھی شامل ہیں، جو لاکھوں روپے لیکر سی ایس ایس کے پرچے امتحان شروع ہونے سے چند گھنٹے قبل آوٹ کرتے تھے۔

ایف آئی اے حکام نے بتایا کہ ملزم انجینئر شہزاد سیال نے دوران تفتیش یہ اعتراف بھی کیا کہ فیڈرل پبلک سروس کمیشن کے کوئٹہ میں نگران خالد حسین مغیری سی ایس ایس کے پرچے امتحان شروع ہونے سے ایک سے 2 گھنٹے قبل انہیں واٹس اپ کرتا تھا اور وہ اسے ای ٹی او لاہور سید تجمل حسین نقوی کو بھیج دیتا تھا، تجمل نقوی اس پرچے کو لیک کرکے اس کے عیوض امیدواروں سے بھاری رقوم وصول کرتے تھے، رقم میں سے 9 لاکھ 80 ہزار روپے کا حصہ ریجنل ٹیکس آفس ملتان کے انسپکٹر سجاد کے ذریعے خالد حسین مغیری کے ملتان کے ایک بینک اکاونٹ میں بھیجے گئے۔

ملزمان کے بیانات اور تفتیش کے دوران ملنے والے شواہد کی روشنی میں ایف آئی اے لاہور کی درخواست پر کوئٹہ میں تعینات فیڈرل پبلک سروس کمیشن کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر خالد حسین مغیری کو ایف آئی اے بلوچستان کی ٹیم نے گرفتار کرلیا، ایف آئی اے حکام کے مطابق خالد حسین مغیری کو لاہور منتقل کیا جائے گا، جس کیلئے مقامی عدالت سے راہداری ریمانڈ حاصل کرلیا گیا ہے، اسکینڈل میں ملوث دیگر ملزمان کی گرفتاری کیلئے بھی چھاپے مارہے جارہے ہیں۔

مزید : قومی


loading...