وزارت ملنے کے بعد جہانگیر ترین کو فون کیا ،انہوں نے کہا منع نہ کیجیے گا :خالد مقبول صدیقی

وزارت ملنے کے بعد جہانگیر ترین کو فون کیا ،انہوں نے کہا منع نہ کیجیے گا :خالد ...
وزارت ملنے کے بعد جہانگیر ترین کو فون کیا ،انہوں نے کہا منع نہ کیجیے گا :خالد مقبول صدیقی

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن ) متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے کنوینر خالد مقبول صدیقی نے کہا ہے کہ لوگوں کے مبارکبادوں سے پتا چلا تھا کہ مجھے وزیر بنادیا گیا جس کے بعد میں نے جہانگیر ترین کو فون کیا انہوں نے کہا منع نہ کیجیے گا۔ان کا کہنا تھا کہ ہم نے جو 2 وزارتیں مانگی تھیں، اس میں وزارت قانون نہیں تھی، پی ٹی آئی نے کہا کہ فروغ نسیم چاہیے تو ہم نے کہا آپ اپنے کوٹے پر بنا لیں، تحریک انصاف کو قانون کی وزارت کے لیے ایم کیو ایم کی ضرورت تھی۔نجی نیوز چینل جیو کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ میں پہلی دفعہ ہی جب وزیر بنا تھا غلط بنا تھا کیوں کہ ایم کیو ایم نے وزارت کے لیے میرا نام نہیں دیا تھا بلکہ امین الحق اور محمد علی اقبال کا نام دیا تھا۔ان کا کہنا تھا کہ کچھ پرانے تجربات اورکچھ دوستوں کی وجہ سے پی ٹی آئی کے ساتھ وزارتوں میں بیٹھنا پڑا، پہلے انہیں کہا تھا کہ صحیح طرح گنا نہیں تو آپ کو ہمیں تولنا پڑ جائے گا۔ایم کیو ایم کے کنوینر نے کہا کہ ہم نے وعدے پورے کیے مگر پی ٹی آئی نے مطالبات پورے نہیں کیے، انہیں یاد رکھنا چاہیے کہ سندھ کا سب سے بڑا مینڈیٹ کراچی سے ہے جو ہم نے دیا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ معاملات طے ہونے کے بعد دوبارہ وزارت میں جانا پڑتا ہے تو وہ فرد میں نہیں ہوں گا۔

مزید : قومی