بکنی پہن کر مالدیپ کے ساحل پر پہنچنے والی برطانوی خاتون کو پولیس نے دبوچ لیا

بکنی پہن کر مالدیپ کے ساحل پر پہنچنے والی برطانوی خاتون کو پولیس نے دبوچ لیا
بکنی پہن کر مالدیپ کے ساحل پر پہنچنے والی برطانوی خاتون کو پولیس نے دبوچ لیا

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) چھٹیاں گزارنے مالدیپ جانے والی برطانوی لڑکی کو وہاں بکنی پہننا مہنگا پڑ گیا۔ پولیس نے دبوچ لیا اور گھسیٹتے ہوئے ساحل سمندر سے لے گئے۔ میل آن لائن کے مطابق 26سالہ سیسلیا جیسٹرزیمبسکا نامی یہ لڑکی مالدیپ کے جزیرے مافوشی کے ساحل پر موجود تھی جہاں اچانک پولیس والے آ گئے اور اسے پکڑ لیا۔ منظرعام پر آنے والی ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ لڑکی کو تین پولیس اہلکاروں نے پکڑ رکھا ہوتا ہے اور ایک پولیس اہلکار اس کے جسم کو ایک کپڑے سے ڈھانپنے کی کوشش کررہا ہوتا ہے۔ اس دوران لڑکی شدید مزاحمت کر رہی ہوتی ہے۔ ویڈیو کے آخر میں پولیس والے اسے لگ بھگ گھسیٹتے ہوئے ساحل سے لیجا رہے ہوتے ہیں اور وہ تاحال مزاحمت کر رہی ہوتی ہے۔

رپورٹ کے مطابق جب سیسلیا کو اس طرح گرفتار کیے جانے کی ویڈیو منظرعام پر آئی تو مالدیپ پولیس کے سربراہ کی طرف سے سیسلیا سے معافی مانگی گئی اور ان کی رہائی کا حکم دیا گیا۔ پولیس چیف کا کہنا تھا کہ پولیس افسران نے معاملے کو برے طریقے سے ڈیل کیا۔ اس پر ان کے خلاف کارروائی ہو گی۔رہائی پانے کے بعد واپس برطانیہ پہنچ کر سیسلیا کا کہنا تھا کہ ”جب پولیس نے مجھ پر دھاوا بولا تو مجھے ایسے لگا جیسے یہ لوگ اغواءکار ہیں اور مجھے اغواءکیا جا رہا ہے۔ اس واقعے سے میں ایسی خوفزدہ ہوئی ہوں کہ یہ خوف تمام عمر میرے ذہن پر سوار رہے گا۔“

مزید : برطانیہ