2 پولیس اہلکاروں کی 20 سالہ لڑکی کے ساتھ اجتماعی زیادتی،لڑکی پر کیا الزام لگا کر ریپ کیا؟ ہنگامہ برپا ہوگیا

2 پولیس اہلکاروں کی 20 سالہ لڑکی کے ساتھ اجتماعی زیادتی،لڑکی پر کیا الزام لگا ...
2 پولیس اہلکاروں کی 20 سالہ لڑکی کے ساتھ اجتماعی زیادتی،لڑکی پر کیا الزام لگا کر ریپ کیا؟ ہنگامہ برپا ہوگیا

  



گورکھ پور (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی ریاست اتر پردیش کے ضلع گورکھ پور میں 2 پولیس اہلکاروں نے ایک 20 سالہ نوجوان لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق لڑکی کے ساتھ زیادتی گورکھ پور ریلوے سٹیشن کے قریب ایک ہوٹل میں کی گئی ، جس کے باعث اس کی حالت خراب ہوگئی۔ 20 سالہ لڑکی نے اپنے گھر والوں کو واقعے کے بارے میں بتایا جنہوں نے پولیس سے رجوع کیا ، پولیس نے نامعلوم ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے۔ دوسری جانب متاثرہ لڑکی کو ہسپتال میں داخل کرادیا گیا ہے جہاں اس کا علاج جاری ہے۔

پولیس نے مقدمہ درج کرنے کے بعد تحقیقات شروع کردی ہیں ، پولیس کے مطابق سی سی ٹی وی فوٹیج کا جائزہ لینے سے یہ معلوم ہوا ہے کہ متاثرہ لڑکی اپنی خوشی سے ملزمان کے ساتھ ہوٹل کے کمرے میں گئی۔ متاثرہ لڑکی نے الزام عائد کیا ہے کہ پولیس اہلکاروں نے اس پر جسم فروشی کا الزام لگایا اور اس کے ساتھ مار پیٹ اور پھر اجتماعی زیادتی کی۔

دوسری جانب مقامی سیاسی رہنماﺅں نے ضلعی مجسٹریٹ کے دفتر کے باہر دھرنا دے دیا ہے، مظاہرین نے مطالبہ کیا ہے کہ نوجوان لڑکی کا ریپ کرنے والے ملزمان کی پشت پناہی کرنے والے گورکھ پور تھانے کے تمام اہلکاروں کو معطل کیا جائے۔

مزید : جرم و انصاف