صوابی، شادی شدہ خاتون کے قتل کاڈراپ سین، قاتل بیٹی نکلی 

  صوابی، شادی شدہ خاتون کے قتل کاڈراپ سین، قاتل بیٹی نکلی 

  

صوابی(بیورورپورٹ)پولیس نے موضع کوٹھا میں شادی شدہ خاتون کی اندھے قتل کو ٹریس کر لیا قاتلہ مقتول کی اپنی ہی بیٹی نکلی دو فروری کو سعید اللہ سکنہ کوٹھا نے تھانہ ٹوپی میں ایف آئی آر درج کیا تھا کہ ان کی بیوی مسماۃ ن کو نامعلوم افراد نے چوری کی نیت سے گھر کے اندر قتل کیا جب کہ ان کی بیٹی مسماۃ (الف) کو اپنے ساتھ لے کر اغواء کر لیا تاہم پولیس نے اس اندھے کیس کو ٹریس کرنے کے لئے جدید خطوط پر تفتیش شروع کر دی اور بلا آخر اس اندھے کیس کوٹریس کر لیا ٹوپی پولیس نے مقتولہ کی چودہ سالہ بیٹی (الف) اور اس کے ماموں زاد ارشد اقبال سکنہ بٹاکڑہ کو گرفتار کر لیا۔دوران تفتیش ملزمہ نے پولیس کو بتایا کہ ماموں زاد ارشد اقبال کے دوسرے بھائی کی شادی کے موقع  پر ارشد اقبال کے ساتھ ملاقات ہوئی تھی۔اس نے موبائل اور سم دینے کے بعد رابطہ قائم ہو رہا تھا جب اس کا علم میرے والدہ کو ہوا تو اس نے موبائل اور سم کے متعلق پوچھا کہ یہ کس سے لیا اور ساتھ کہا کہ اگر میں نے نہیں بتایا تو پولیس کے ذریعے معلومات حاصل کرینگے جس پر میں نے ماں پر پیچھے سے اپنے والد کی پستول سے فائرنگ کی جس سے وہ شدید زخمی ہو گئی اس دوران وہ میرے ساتھ لڑ پڑی جس پر میں نے ان کو پھانسی دے کر قتل کیامیں اپنی والدہ کی قتل پر انتہائی آفسردہ ہوں۔شیطان نے ورغلایا میں اللہ پاک سے اس گناہ عظیم پر معافی کی طلبگار ہوں۔ان کا کہنا تھا کہ ماں کو قتل کرنے کے بعد خود ارشد اقبال کے بہن کے گھر موضع جہانگیرہ فرار ہو گئی ارشد اقبال نے پولیس کو بتایا کہ چونکہ میں راولپنڈی میں تھا اور جب واپس آیا تو مسماۃ الف نے مجھے اپنی والدہ کے قتل کے بارے میں بتایا جس پر میں انتہائی پریشان اور آفسردہ ہو گیا ٹوپی پولیس نے دونوں کو گرفتار کر کے ان کے خلاف قتل کی ایف آئی آر درج کر کے تفتیش شروع کر دی ہے۔مقتولہ کی شوہر سعید اللہ نے اپنی بیوی کے اندھے کیس کو ٹریس کرنے پر مقامی پولیس کو خراج تحسین پیش کیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -