حکومت اور واپڈاکے احتجاجی ملازمین میں مذاکرات کا میاب، ڈی چوک دھرنا ختم 

حکومت اور واپڈاکے احتجاجی ملازمین میں مذاکرات کا میاب، ڈی چوک دھرنا ختم 

  

اسلام آباد(آن لائن)وفاقی دارلحکومت کے ڈی چوک میں نجکاری کیخلاف احتجاجی واپڈا ملازمین اور حکومت کے مابین مذاکرات کامیاب ہوگئے جسکے بعددھرنا ختم کر دیا گیا۔احتجاجی رہنماؤں کا کہناہے اداروں کی نجکاری نہ کرنے کے حوالے سے یقین دہانی کروائی گئی،1806 ملازمین کے حوالے سے حکومت کی جانب سے آپشن دیا جائے گا،تنخواہوں میں اضافے کے حوالے سے حکومت کے ساتھ ایک اور میٹنگ کی جائے گی۔ تفصیلات کے مطابق اسلام آباد کے ڈی چوک میں پیر کے روز واپڈا ملازمین نے احتجاجی دھرناد یا۔ تمام یونینز،پنشنرز ایسوسی ایشن و سول سوسائٹی،لیڈی ہیلتھ ورکرز،یوٹیلیٹی سٹورز یونین و ملازمین بھی شریک،ہزاروں ملازمین پولیس حصار میں پہلے پریس کلب اور پھر ڈی چوک پہنچے،پرامن مظاہرہ اور حکومت سے ادارے کی نجکاری روکنے،تنخواؤں میں آضافہ،ملازمین کی مشکلات اور مستقلی سمیت دیگر مطالبات پورے کرنے کامطالبہ کیا۔ مظاہرین کی جانب سے مطالبات کے حق میں تقاریر نے ریڈزون کے پہلے گیٹ کو گرما دیا ہے۔ قبل ازیں  پریس کلب کے باہر واپڈا،لیبر،پنشنرز،لیڈی ہیلتھ ورکرز،یوٹیلیٹی سٹورز سمیت سول سوسائٹی کے سینکڑوں افراد جمع ہو ئے اور کچھ دیر قیام کے بعد ڈی چوک کی جانب روانہ ہوئے،راستہ کو پولیس نے اپنے حصار میں لے رکھا تھا اور اس دوران نامساعد حالات سے نمٹنے کیلئے ضروری اقدامات بھی اٹھائے گئے تھے،ایمبولینس،فائر برگیڈ،بکتر بند گاڑیاں بھی موجود رہیں۔

دھرنا ختم  

مزید :

پشاورصفحہ آخر -