دینی مدارس کے تحفظ کیلئے عوام اور علماء شانہ بشانہ کھڑے: عطاء الرحمان 

دینی مدارس کے تحفظ کیلئے عوام اور علماء شانہ بشانہ کھڑے: عطاء الرحمان 

  

 مہمند(نمائندہ پاکستان) دینی مدارس کے تحفظ کیلئے عوام اورعلماء کرام شانہ بشانہ کھڑ ے ہیں۔ مدارس کے تحفظ پر کوئی آنچ نہیں دینگے جبکہ جمعیت علماء اسلام کا آخری کارکن کے حیات تک آئین سے اسلامی دفعات ختم کرنے کاسوال پیدا نہیں ہوتا۔قبائیل کومغربی طاقتوں کے اشارے پر ضم کرکے مختلف مسائل کھڑی کر دی۔جمعیت علماء اسلام کے صوبائی امیر عطاء الرحمان کا ختم القرآن تقریب سے خطاب،تفصیلات کے مطابق تحصیل حلیمزئی مدرسہ ابی ہریرہ علاقہ رامی خیل میں ختم القرآن، دورہ حدیث اور دورہ تفسیر کے پروقار تقریب سے اپنے خیالات کااظہارکرتے ہوئے کہاکہ قبائل پکے مسلمان، مہمان نواز اور جمعیت علماء الاسلام کے مکمل پیروکار ہیں۔اور جمعیت علماء اسلام کے قائد مولانا فضل الرحمان کے قیادت میں ہر ممکنہ قربانی دینے کے لیے تیار ہیں۔انہوں نے کہا کہ اگر موجود حکومت نے آئین سے اسلامی دفعات کے خاتمے کی کوشش کرتے ہے توجمعیت کے ایک بھی ورکر کے ہوتے ہوئے ختم کرنے کی جرات بھی نہیں کر سکتے۔دینی مدارس انسانیت کوحق لڑنے کی سبق سکھاتی ہیں۔ تقریب میں جے یو آئی نوشہرہ کے جنرل سیکرٹری مفتی حاکم علی حقانی، سابقہ سنیٹرباجوڑ عبدالرشید، جے یو آئی ضلعی امیر مولانا محمد عارف حقانی سابقہ سنیٹر حافظ رشید احمد،مولانا عطاء الرحمن، مولانا سمیع اللہ،مولانا عبد الحق، مولانا عبدالغفار صافی،مولانا ریاض الدین، جامع ابو ہریرہ للبینن و بنات کے مہتمم مولانا مصطفیٰ کے علاؤہ دیگر علماء و عوام نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔مدرسہ ہذا میں ایک سو دس طلباء و طالبات نے حفظ القرآن دورہ حدیث دورہ تفسیر مکمل کرکے تقریب میں فارغ طلباء کو دستار پہنائی گئی۔اس موقع پر مقررین نے تقریب سے اپنے خیالات کااظہارکرتے ہوئے کہا کہ1857جنگ میں انگریز نے علما کو قصوروار ٹہرا کر انگریزوں حکمرانوں بڑی بے رحمی سے علماء کی قتل عام کا حکم دیا۔ مگر علمائکرام نے جانوں کی قربانی دیکر انگریزوں کے نام ونشان ختم کر دیا۔ اور  تادم تک دین اسلام پرکوئی آنچ نہیں دیا۔بلکہ ہم دیوبند مشران کے نقشے قدم پر چل کر آج بھی انگریزی قانون کے خلاف آواز اٹھاتے ہیں۔اور کوئی بھی دین اسلام کے مدارس کو میلی آنکھوں سے نہیں دیکھ سکتا۔اور آج بھی جمعیت العلماء اسلام کے کارکن سارے پاکستان کے کونے کونے میں مولانا فضل الرحمان کی قیادت میں پھیلے ہوئے ہیں۔ صوبائی آمیر نے سینٹر ہلال الرحمن، سابقہ ایم این اے بلال الرحمن  اورایم پی اے عباس الرحمن کے چچا کے وفات پر شاتی کور میں تعزیت کی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -