امریکہ اسلحہ بیچنے کیلئے مشرق وسطٰی کے مسلمان ملکوں کو لڑانا چاہتا ہے: سراج الحق 

    امریکہ اسلحہ بیچنے کیلئے مشرق وسطٰی کے مسلمان ملکوں کو لڑانا چاہتا ہے: ...

  

 لاہور (خصوصی رپورٹ)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق سے ایرانی سفیر سید محمد علی الحسینی نے اسلام آباد میں میاں محمد اسلم کی رہائش گاہ پر ملاقات کی۔ ملاقات میں علاقائی صورتحال پر دو طرفہ موقف سے آگاہی حاصل کی گئی۔ایرانی سفیر نے ایرانی عوام اور حکومت کی نیک خواہشات اور احساسات امیر جماعت کی خدمت میں پیش کیے۔سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی امیرالعظیم، نائب امیر میاں محمد اسلم اور ڈائریکٹر امور خارجہ جماعت اسلامی آصف لقمان قاضی بھی ملاقات میں شریک تھے۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ افغانستان سے امریکہ نہ نکلا تو پاکستان اور ایران، دونوں کے لیے خطرات ہوں گے۔ افغانستان کا مسئلہ حل طلب ہے اور اس کے حل کے لیے پاکستان اور ایران کو متفقہ موقف اختیار کرنا چاہیے۔ ایران کے ساتھ ہمارے نظریاتی اور فکری تعلقات ہیں۔ حرمت رسول ؐ پر پاکستان ایران اور ترکی نے ردعمل ظاہر کیا ہے لیکن اس موضوع پر زیادہ شدت کے ساتھ بین الاقوامی فورمز پر موقف اختیار کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہاکہ امریکہ مشرق وسطیٰ میں مسلمان ممالک کو آپس میں لڑانا چاہتاہے تاکہ امریکہ کا اسلحہ زیادہ سے زیادہ فروخت ہو۔ مسلمان ممالک کو جنگ ترک کے مذاکرات کے ذریعے مسائل حل کرنے چاہئیں تاکہ جو وسائل جنگوں میں خرچ ہوتے ہیں، وہ تعلیم، صحت اور عوام کی بہبود پر خرچ ہوں۔ ہم کشمیری عوام کے حق خود ارادیت کے لیے آواز اٹھانے پر ایرانی حکومت کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔

سراج الحق

مزید :

صفحہ آخر -