لاہور قلندرز دوبارہ دھمال ڈالنے کیلئے تیار، ٹیم کا ستون کون ہے؟ سہیل اختر نے انکشاف کر دیا

لاہور قلندرز دوبارہ دھمال ڈالنے کیلئے تیار، ٹیم کا ستون کون ہے؟ سہیل اختر نے ...
لاہور قلندرز دوبارہ دھمال ڈالنے کیلئے تیار، ٹیم کا ستون کون ہے؟ سہیل اختر نے انکشاف کر دیا
سورس:   Twitter

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) فرنچائز لاہور قلندرز چھٹے ایڈیشن میں دوبارہ دھمال ڈالنے کیلئے تیار ہیں اور کپتان سہیل اختر نے سینئر آل راﺅنڈر محمد حفیظ کو ٹیم کا ستون قرار دیدیا ہے جن کا کہنا ہے کہ بین ڈنک اور ڈیوڈ ویزے سمیت غیر ملکی کرکٹرز سے فتح گر کارکردگی کی امیدیں وابستہ ہیں،اس بار ٹائٹل کی پیاس بجھانے کی کوشش کریں گے، شاہین شاہ آفریدی پرکام کا بوجھ نظر میں ہے، جہاں ضرورت محسوس ہوئی آرام دیں گے۔ 

تفصیلات کے مطابق لاہور قلندرز کے کپتان سہیل اختر نے کہاکہ ہم نے  چھٹے ایڈیشن کیلئے بھی گزشتہ سیزن کھیلنے والے بیشتر کھلاڑیوں کی خدمات حاصل ہیں البتہ جہاں خلا نظر آ رہا تھا اسے پر کرتے ہوئے ٹیم کی قوت بڑھانے کی کوشش کی ہے، انہوں نے کہا کہ محمد حفیظ ہمارے سب سے اہم کھلاڑی ہیں، میدان سے اندر اور باہر  ان کا تجربہ ہمارے لئے اثاثہ ہے،حفیظ کی رہنمائی سے نوجوان کرکٹرز کی بھی بڑی حوصلہ افزائی ہوتی ہے، بین ڈنک، ڈیوڈ ویزا اور سمت پٹیل نے گزشتہ سیزن میں شاندار پرفارم کیا، اس بار بھی ان سے فتح گر کارکردگی کی امیدیں وابستہ ہیں۔

سہیل اختر کا کہنا تھا کہ ہم مثبت کرکٹ کھیلتے ہوئے ٹائٹل اپنے نام کرنے کی کوشش کریں گے، ایک سوال پر کپتان نے کہا کہ شاہین شاہ آفریدی پاکستان کی جانب سے کھیلتے رہے ہیں، انٹرنیشنل کرکٹ یا فرنچائز ٹورنامنٹ ہو غیر معمولی صلاحیتوں کے حامل فاسٹ باﺅلر میدان میں ہوں تو پوری جان لڑاتے ہیں، پاکستان کے مایہ ناز نوجوان فاسٹ باﺅلر شاہین شاہ آفریدی پر کام کا بوجھ ہماری نظر میں ہے، اس لئے جہاں ضرورت محسوس ہوئی انہیں آرام دیں گے کیونکہ ہمارے پاس ان کے متبادل باﺅلرز بھی موجود ہیں۔ 

لاہور قلندرز کے کپتان نے کہا کہ حارث رﺅف اور دلبرحسین بھی فاسٹ باﺅلنگ کے ہتھیاروں سے مزین ہیں اور امید ہے کہ اس بار دونوں گزشتہ سیزن سے بھی بہتر باﺅلر نظر آئیں گے، سہیل اختر نے کہا کہ پی ایس ایل کا معیار دنیا کی دیگر لیگز سے بہتر ہے،بیٹنگ، باﺅلنگ اور وکٹوں کا معیار اعلیٰ ہے، کسی ٹیم کو کمزور نہیں خیال کیا جا سکتا، صرف روایتی حریف کراچی نظر میں نہیں پشاور اور کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کا کمبی نیشن بھی خاصا متوازن ہے۔

مزید :

کھیل -