ایک اور کمسن گھریلو ملازم تشدد کا نشانہ بن گیا

ایک اور کمسن گھریلو ملازم تشدد کا نشانہ بن گیا
ایک اور کمسن گھریلو ملازم تشدد کا نشانہ بن گیا

  

فیصل آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )فیصل آباد میں میاں بیوی نے آپس کے لڑائی جھگڑے کا غصہ کمسن 13 سالہ گھریلو ملازم کو تشدد کا نشانہ بناکر نکال دیا۔

چیئرپرسن چائلڈ پروٹیکشن بیورو سارہ احمد  کے مطابق چائلڈ پروٹیکشن بیورو فیصل آباد نے تشدد کا شکار 13سالہ بچے کو تحویل میں لے لیا ہے۔صفدر نامی بچہ کاشف نامی شخص کے گھر میں نجی سوسائٹی میں گھریلو ملازم تھا۔ بچے کو اس کے والد نے تشدد کا نشانہ نہیں بنایا بلکہ مالکان نے تشدد کا نشانہ بنایا۔میاں بیوی کی آپس کی لڑائی کے بعد کاشف نے گھریلو ملازم صفدر کو صفائی صحیح نہ کرنے پر پائپ اور تاروں سےتشدد کا نشانہ بنایا۔تشدد کا شکار بچے نے بھاگ کر جان بچائی  اورپہلے خوف کی وجہ سے مالکان کی جانب سے تشدد کے بارے میں نہ بتایا۔چائلڈ پروٹیکشن بیورو کی جانب سے بچے کا علاج معالجہ جاری ہے۔ میڈیکل کے بعد چائلڈ پروٹیکشن بیورو کی معاونت سے گھریلو ملازم پر تشدد پر مالکان کے خلاف  مقدمہ درج کیا جائے گا۔

مزید :

قومی -