ملک میں داعش کے وجود سے انکاری قوم کی آنکھوں میں دھول جھونک رہے ہیں، ناصر عباس

ملک میں داعش کے وجود سے انکاری قوم کی آنکھوں میں دھول جھونک رہے ہیں، ناصر ...

لاہور (نمائندہ خصوصی)حکمران دہشت گردی کے عفریت سے جان چھڑانے کی بجائے مردانہ وار مقابلہ کرے،قوم ساتھ دیگی،عالمی دہشت گرد گروہ ،،داعش،،سے متعلق میڈیا رپورٹس کے منظرعام پر آنے کے بعد حکومتی وزراء کی جانب سے ملک میں داعش کی وجود سے انکاری قوم کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کے مترادف ہے،لاہور،سیالکوٹ سمیت پنجاب کے دیگر اضلاع سے داعش کے کارندوں کی گرفتاری اور اس سفاک گروہ کی وال چاکنگ اس بات کی دلیل ہے کہ دہشت گرد منظم انداز میں اپنے مذموم عزائم کی تکمیل کے لئے سرگرم ہے،ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے میلاد النبی ﷺ کے مناسبت سے اتحاد امت کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

،انہوں نے ملٹری کورٹس سے دہشت گردوں کو ملنے والی سزاوُں کو سراہتے ہوئے کہا کہ ملٹی کورٹس کے اس عمل سے ملت تشیع کے بیس ہزار سے زائد شہداء کے لواحقین کو انصاف کی امیدپیدا ہو گئی ہے،ان سفاک دہشت گردوں نے ملک کے مایہ ناز ڈاکٹرز،انجینئرز،وکلاء،کاروباری شخصیات اور علماء کو بے دردی سے شہید کئے،بیرون ملک سے اعلیٰ تعلیم حاصل کرکے جذبہ حب الوطنی کے ساتھ پاکستان میں خدمت سرانجام دینے والے ان بے گناہوں کو حب الوطنی کے جرم میں ان غیر ملکی ایجنٹ دہشت گردوں نے موت کے گھاٹ اتار دیے،ہم کئی دہائیوں سے انصاف کے لئے پکار رہے تھے مگر حکمرانوں کی مصلحت پسندی اور دہشت گردوں کے حکومتی صفوں میں بیٹھے سہولت کار اور سیاسی سرپرست ان سفاک درندوں کو تحفظ فراہم کر رہے تھے،انہوں نے مزید کہا کہ دہشت گردوں کے سیاسی سرپرستوں اور سہولت کاروں کے خلاف کاروائی کے بغیر اس ناسور سے جان چھڑانہ ممکن نہیں،آج دہشت گردوں کے سرپرست اور ہزاروں پاکستانیوں کے قاتل گروہ کے سرپرست پھر سے مذہنی سیاسی جماعتوں کے مراکز کا آزادانہ دورہ کر کے ثابت کر رہا ہے کہ ان کے سرپرست اب بھی ان کے ساتھ ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4