ٹیکس کامعاملہ،پنجاب ریونیو اتھارٹی اور ڈیفنس ہاؤسنگ اتھارٹی میں ٹھن گئی

ٹیکس کامعاملہ،پنجاب ریونیو اتھارٹی اور ڈیفنس ہاؤسنگ اتھارٹی میں ٹھن گئی

لاہور(جنرل رپورٹر) پنجاب ریونیو اتھارٹی اور ڈیفنس ہاوسنگ اتھارٹی میں ٹھن گئی ہے پنجاب ریونیو اتھارٹی نے ڈی ایچ اے کو تحریری طور پر نوٹس جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ وہ نیسپاک ،این ایف سی اور ایف ڈبلیو او ڈی ایچ اے کے کنٹریکٹر ہیں ان کی آمدن کی تفصیلات کا ریکارڈ فراہم کیا جائے تاہم ان ادارون سے ان کی آمدن کے حساب سے سروسز پر 16فیصد ٹیکس کی وصولی کی جا سکے جس پر ڈی ایچ اے نے ریکارڈ فراہم کرنے سے انکار کر دیا ہے اور موقف اختیار کیا ہے کہ نیسپاک ،این ایف سی اور ایف ڈبلیو او ہر قسم کے ٹیکس سے مستثنی ہیں ان کا ریکارڈ فراہم نہیں کیا جا سکتا جس پر دونوں اداروں میں تنازع پیدا ہو گیا ہے ۔بتایا گیا ہے کہ پنجاب ریونیو اتھارٹی نے سروسز پر 16فیصد سیکز ٹیکس کی وصولی کے لیے ڈی ایچ اے کو نوٹس جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ وہ اپنے نیسپاک،این ایف سی اور ایف ڈبلیو او سمیت دیگر کنٹریکٹرز کا ریکارڈ فراہم کریں گزشتہ 6سالوں میں ان اداروں نے ڈی ایچ اے میں کتنا کام کیا اور اس سے کتنی آمدن حاصل کی گئی نوٹس میں کہا گیا ہے کہ ڈی ایچ اے سمیت دیگر وفاقی اور سوبائی اتھارٹیز سیلز ٹیکس کی دفع 57کے تحت ہر قسم کی معلومات فراہم کرنے کی پابند ہیں جس کے حوالے سے ڈی ایچ اے نے مذکورہ کنٹریکٹرز کی معلومات اور ریکارڈ فراہم کرنے سے انکار کر دیا ہے اور کہا ہے کہ چونکہ مذکورہ اداروں کو ہر قسم کے ٹیکس سے استثنی حاصل ہے وہ معلومات فراہم نہیں کر سکتے۔

ریونیو اتھارٹی

مزید : صفحہ آخر