گیس لیکج کھلے پٹرول کی فروخت اور آتش بازی کے خفیہ گودام ،آتشزدگی کی بڑی وجوہات بن گئے

گیس لیکج کھلے پٹرول کی فروخت اور آتش بازی کے خفیہ گودام ،آتشزدگی کی بڑی ...

لاہور (رپورٹ۔یو نس با ٹھ) ایل ڈی اے پلا زہ ، مو چی گیٹ ، پیس ، لبرٹی پلا زہ ،مغل پورہ بس ، کھا ڑک سٹا پ ،ہا ل روڈ ،مشر ق پلا زہ ۔نیو انا ر کلی ،شاہ عا لمی کے بعد شاد با غ میں ایک ہی خا ندا ن کے 6بچو ں، بر کی اور اب لو ہا ر ی گیٹ میں،آتشزدگی کے بڑے واقعا ت میں200سے زائدافرادآگ لگنے کے با عث مو ت کی آغو ش میں چلے گئے جبکہ 400سے زائدافراد بر ی طر ح جھلس کر ہسپتا لو ں میں داخل ہوئے ۔ پو لیس نے بیشتر واقعا ت کو تو محض اتفا قیہ حادثہ قرار دیاجبکہ کئی ایک واقعا ت پر مقد ما ت بھی درج کیے گئے۔لیکن 90فیصد سے زائد واقعا ت کی مکمل تحقیقا ت نہ کی جا سکیں۔اور نہ ہی کسی کی رپورٹ منظر عا م پر آئی۔اکثر اوقا ت شہر میں کھلے پٹرول کی فروخت ،سوئی گیس کی لکیج ،بجلی کی تا رو ں سے شا رٹ سر کٹ آتش بازی کا سامان بنانے والی فیکٹریا ں بھی آتشزد گی کا سبب بنتے ہیں ۔شاہ عالمی مارکیٹ میں واقع خفیہ گوداموں‘ شاد باغ‘ بادامی باغ‘ شاہدرہ‘ شاہدرہ ٹاؤن‘ لاری اڈا‘ راوی روڈ‘ شفیق آباد‘ سبزازار‘بھاٹی‘ لوہاری‘ مصری شاہ اور دیگر درجنوں ملحقہ علاقوں میں آتش بازی کا سامان تیار کرنے والی سینکڑوں خفیہ‘ چھوٹی‘ بڑی فیکٹریوں کے انکشاف کے باوجود پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنے والے ادارے ان فیکٹریوں کو بند کر نے کی بجائے وہا ں سے منتھلی لے کر خا مو ش تما شا ئی بنے ذرائع کے مطابق ساندہ کے علاقہ بند روڈ‘لاری اڈا کے علاقہ میں ٹرک اڈوں کے اطراف میں پھیلی آبادی‘ شاہدرہ ٹاؤن اور شاہدرہ میں دریائے راوی کے بند کے اطراف‘ شاد باغ کے علاقہ رنگ روڈ کے دونوں طرف پولیس کی سر پرستی میں یہ گھناؤنا کاروبار جاری ہے جبکہ یہ موت بانٹنے والا سامان بادامی باغ کے10کلو میٹر کے علاقہ میں پھیلے ٹرک اڈوں کے ذریعے پنجاب سمیت ملک کے دیگر علاقوں میں بھی بھجوایا جا رہا ہے اور بادامی باغ کے ٹرک اڈے اس آتش بازی کے سامان میں استعمال ہونے والے بارود و دیگر کیمیکل لانے اور آتش بازی کا سامان صوبہ کے دیگر علاقوں میں لیجانے کا واحد ذریعہ ہیں۔ ہو ئے ہیں ۔ لوکل گورنمنٹ آرڈیننس کے تحت آتش بازی کی خرید وفروخت کی اجازت نہیں۔ یہ ممنوعہ کاروبار ہے جس کا لائسنس جا نی وا قعا ت کے رونما ہو نے کا ہی ہو سکتا ہے نہ ہی رجسٹریشن کی جا سکتی ہے۔ چائنا سے بڑی تعداد میں آتش بازی کے سامان کی درآمد کے حوالے سے ضلعی انتظامیہ اور پولیس کے پاس معقول جواب نہیں ہے کہ اس کی اجازت کیسے ملتی ہے یا سمگلنگ میں کون سے ادارے ملوث ہیں۔ لوکل گورنمنٹ آرڈیننس 2001 کے تحت آتش بازی کی خرید وفروخت کی اجازت نہیں یہ ممنوعہ کاروبار ہے جس کا لائسنس جاری ہو سکتا ہے نہ ہی رجسٹریشن کی جا سکتی ہے۔ اس کے باوجود اس کا روبار کا جاری رہنا سرکاری اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے اور کسی وقت بھی آتش بازی کے خفیہ گودام بڑے سانحہ کا باعث بن سکتے ہیں ۔ اسی طر ح شہر کی گنجا ن ما رکیٹو ں میں جس طر ح بجلی کی تا رو ں کے گچھے اور جا ل دکھا ئی دیتے ہیں ۔لا ہور پو لیس کے مطا بق آتشز دگی کے واقعات کی روک تھا م کے لیے پو لیس ہر سا ل ضلعی انتظا میہ کے سا تھ مل کر ضرور ی اقدا ما ت کر تی ہے ۔

آتشزدگی

مزید : صفحہ آخر