سیکورٹی گارڈ کی ساتھیوں کیساتھ بینک ڈکیتی 30 لاکھ نقدی اور گاڑی لے اڑے

سیکورٹی گارڈ کی ساتھیوں کیساتھ بینک ڈکیتی 30 لاکھ نقدی اور گاڑی لے اڑے
  •  سیکورٹی گارڈ کی ساتھیوں کیساتھ بینک ڈکیتی 30 لاکھ نقدی اور گاڑی لے اڑے
  •  سیکورٹی گارڈ کی ساتھیوں کیساتھ بینک ڈکیتی 30 لاکھ نقدی اور گاڑی لے اڑے

لا ہور (خبر نگا ر ) عسکری بینک میکلورڈ روڈکااپناہی سکیورٹی گارڈ تین ساتھیوں کے ہمراہ 30 لاکھ روپے لوٹ کرمینجرکی گاڑی پربیٹھ کرفرارہوگیا۔تفصیلات کے مطابق قلعہ گجرسنگھ میکلورڈروڈپرواقع عسکری بینک میں ڈکیتی کی واردات صبح سات بجے ہوئی جب محمدشعیب نامی سکیورٹی گارڈ نے بینک سے باہراپنے دیگردو ساتھیوں کوبھی بلالیااوربینک میں ڈیوٹی پرماموردیگرسکیورٹی گارڈز کو یرغمال بنالیا۔محمد شعیب نے سکیورٹی گارڈمحمدخادم اور ظفر شاہ کوبینک کے تہہ خانے میں بندکردیا۔ملزمان بینک کے مین گیٹ پرکھڑے ہوگئے اورڈیوٹی پرآنے والے تمام ملازمین کوفرداًفرداًیرغمال بناتے رہے۔تمام ملازمین کو کمرے میں بندکرکے ملزمان نے آپریشن مینجرصائم حبیب کے ذریعے تجوری کاتالا کھلوایااور30 لاکھ روپے لوٹ کرمینجرخالدمشتاق کی گاڑی پربیٹھ کرفرارہوگئے۔ بینک ملازمین کے مطابق محمدشعیب کراچی کارہائشی ہے اور6 جنوری کواس بینک میں تعینات ہواتھا۔پولیس نے موقع پرپہنچ کرفرانزک عملے کی مددسے فنگرپرنٹس اوردیگرشواہدجمع کرلیے ہیں۔ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدراشرف کاکہناہے کہ ملزمان فرارہوتے ہوئے ڈی وی آرسسٹم بھی ساتھ لے گئے ہیں۔ انہوں نے بتایاکہ ڈکیتی کی اطلاع ملتے ہی شہربھرمیں ناکہ بندکردی گئی ہے۔پولیس حکام کاکہناہے کہ ملزم پہلے بھی ریکارڈیافتہ ہے۔ ہنگو میں ایک واردات میں ملوث ہے اورسمن آباد میں ملزم کے رشتے داربھی ہیں، جلد گرفتار کرلیں گے۔سی سی پی اوامین وینس کہتے ہیں کہ حکمت عملی تیارکی جارہی ہے کہ آئندہ فاٹاکے لوگوں کوبینک ڈیوٹی پرتعینات نہ کیاجائے۔

مزید : علاقائی