پاکستان شدت پسندی ،دہشتگردی کے خاتمے کیلئے پر عزم ہے:صدر ممنون حسین

پاکستان شدت پسندی ،دہشتگردی کے خاتمے کیلئے پر عزم ہے:صدر ممنون حسین

اسلام آباد (نمائندہ خصوصی) صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ پاکستان شدت پسندی اور دہشت گردی کے خاتمے کے لئے پرعزم ہے۔ قو م اور قومی اداروں نے اس مقصد کے لئے بیش بہا قربانیاں دی ہیں آپریشن ضرب عزم کامیابی سے ہمکنار ہو رہا ہے اور وہ وقت دور نہیں جب پاکستان مکمل طور پر امن کا گہوارہ بن جائے گا ۔صدر مملکت نے یہ بات نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی میں گریجویشن کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی انہوں نے کہا کہ پاکستان کو خطے میں متعدد چیلنجز درپیش ہیں ہم چاہتے ہیں کہ بھارت کے ساتھ کشمیر سمیت ہمارے تمام مسائل بات چیت کے ذریعے حل ہوں اسی طرح ہماری خواہش ہے کہ افغانستان میں قومی مفاہمت کا عمل کامیاب ہو تاکہ خطے میں خوشگوار تبدیلی آئے اور ترقی کا عمل جاری رہ سکے۔ صدرمملکت ممنون حسین نے کہا کہ اکیسویں صدی میں قومی سلامتی کے امور میں غیر معمولی تبدیلیاں آئی ہیں اور اب یہ معاملہ دفاع کے ساتھ ساتھ سیاسی ، ماحولیا تی اور سماجی عوامل سے بھی منسلک ہو گیا ہے یہ ایک غیر روایتی صورتحال ہے جس کے لیے ہمیں نیا اندازِ فکر اختیار کرنا ہوگا۔ انہو ں نے کہا مجھے یقین ہے کہ ایک شاندار مستقبل پاکستان کا منتظر ہے۔ حکومت عوام کی سماجی اور معاشی بہتری کے لیے بہت سے اقدامات کر رہی ہے جن کے نتیجے میں ملک ترقی کرے گا۔ صدر مملکت ممنون حسین نے کہا کہ نیشنل سیکورٹی کورس کی تقریب میں شرکت میر ے لیے باعثِ مسرت ہے۔ یہ پاکستان کا ایک اعلی علمی ادارہ ہے جس نے قومی اور بین الاقوامی سطح پر اپنی حیثیت تسلیم کروائی ہے اس سے نہ صر ف ہماری مسلح افواج بلکہ سو ل سروسز اور برادر ملکوں کے سینیئرافسران بھی فائدہ اٹھا رہے ہیں۔ تقریب میں چیف آف آرمی سٹاف جنرل راحیل شریف،قومی سلامتی امور کے مشیر لیفٹیننٹ جنرل ریٹائر ناصر محمود جنجوعہ ، نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی کے صدر لیفٹیننٹ جنرل انور علی حیدر ،مسلح افواج کے اعلی افسران اور دیگرممتاز شخصیات شریک تھیں۔صدر مملکت نے کامیابی حاصل کرنے والے شرکا کو کورس کی تکمیل پر مبارک باد دی اور ان میں میڈل تقسیم کیے۔دریں اثناء صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ بندرگاہیں ملک کی برآمدات اور درآمدات میں اہم کردار ادا کرتی ہیں اور ان کو جدید اندازمیں ترقی دینا وقت کی اہم ضرورت ہے۔ صدر مملکت سنیٹر کامران مائیکل وفاقی وزیر برائے پورٹس اینڈ شپنگ سے گفتگو کر رہے تھے جنہوں نے ایوانِ صدر میں ان سے ملاقات کی۔ صدر مملکت نے کہا کراچی پورٹ ملک کی اہم بندگاہ ہے اس پر جدید سہولتوں کی فراہمی کے ساتھ ساتھ اس کی استعداد میں بھی اضافہ ہونا چاہیے اور دیگر قومی بندرگاہوں پر بھی بہتر سہولتوں کی فراہمی کو یقینی بنایا جا نا چاہیے۔وفاقی وزیر برائے بندرگاہ و جہاز رانی نے کراچی، بن قاسم اور گوادر بندرگاہ کے بارے میں دلچسپی لینے پر صدر مملکت کا شکریہ ادا کیا اور کراچی بندرگاہ کے علاقے میں سمندر کو گہرا کرنے تاکہ بحری جہاز لنگر انداز ہوسکیں کے بارے میں بھی بریفنگ دی۔ سنیٹرکامران مائیکل نے اقلیتی برادری کے بارے میں بھی حکومت کے اقدامات پر اطمینان کا اظہار کیا اور صدر مملکت کی کوششوں کا بھی شکریہ ادا کیا۔

مزید : کراچی صفحہ اول