برف خانوں میں دودھ سٹور کرنے پر پابندی ، چلرز کولائسنس سے مشروط کر دیا گیا

برف خانوں میں دودھ سٹور کرنے پر پابندی ، چلرز کولائسنس سے مشروط کر دیا گیا

لاہور(جنرل رپورٹر)ملاوٹ زدہ دودھ کی ترسیل روکنے کے لیے پنجاب فوڈ اتھارٹی نے آئس فیکٹریز میں ملاوٹ زدہ دودھ فریز کرنے والوں کے خلاف سخت قانونی کارروائی کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا۔پنجاب فوڈاتھارٹی نے برف خانوں میں دودھ سٹورکرنے پرمکمل پابندی عائدکردی، دودھ کوچلرزمیں سٹورکیا جاسکے گا اوراس کے لیے الگ لائسنس حاصل کرنا ہوگا، برف کے بلاکوں میں دودھ سٹورکرنے والوں سے بھی سختی سے نپٹا جائیگا۔ ڈائریکٹرجنرل پنجاب فوڈاتھارٹی کیپٹن (ر) محمدعثمان کاکہنا ہے صحت دشمن عناصر ملاوٹ زدہ دودھ کے بلاکس بنا کر دوسرے شہروں میں سپلائی کرتے تھے، ۔کیپٹن (ر)محمد عثمان نے واضع کیا ہے کہ آئس فیکٹری کے نام پر دودھ سٹور کر نیوالوں کے خلاف بلاتفریق کارروائیاں کی جائیں گی اوردودھ کو آئس بلاکس میں سٹور کرنے والے کی پروڈکشن بند کر دی جائے گی۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ملاوٹ زدہ دودھ کی موجودگی پرآئس فیکٹری کو سیل کر دیا جائے گا۔ڈی جی فوڈ اتھارٹی کا کہنا ہے عوام تک محفوظ خوراک کی یقینی فراہمی کیلئے پنجاب فوڈ اتھارٹی قوانین میں مزید ترامیم کی جارہی ہیں، پنجاب فوڈ اتھارٹی صوبہ بھر میں دودھ سپلائی کر نیوالوں کی مسلسل کڑی نگرانی کر رہی ہے،جعلی اور ملاوٹی دودھ کے مکمل خاتمے کیلئے پاسچرائزیشن کا قانون نفاذ کیا جا رہا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1