نشتر ہسپتال ادویات خریداری میں گھپلے ،گرفتاریاں شروع مرکزی ملزم پر کڑی نظر

نشتر ہسپتال ادویات خریداری میں گھپلے ،گرفتاریاں شروع مرکزی ملزم پر کڑی نظر

ملتان (وقا ئع نگار )اینٹی کرپشن ملتان نے نشتر ہسپتال میں کروڑوں روپے مالیت کی سرکاری ادویات کی خورد برد کے مقدمہ میں گرفتاریوں کا سلسلہ شروع کردیا۔گزشتہ روز 3 ملزمان حافظ اکرم،محمد واجد اور ہمائیوں ریحان ڈسپنسر /سٹور کیپر ز کو ان کی رہائش گاہ سے گرفتار کیا،ملزمان نے ایک کروڑ مالیت کی سرکاری ادویات خورد برد کر کے مارکیٹ میں فروخت کی تھیں۔دوران تفتیش مارکیٹ میں فروخت کی گئی ادویات اور نشتر ہسپتال میں سپلائی کی(بقیہ نمبر14صفحہ12پر )

گئی ادویات کے بیچ نمبر ایک ہی پائے گئے،واضح رہے کہ مقدمہ کے مرکزی ملزم ایم ایس نشتر ہسپتال ڈاکٹر عاشق ملک عبوری ضمانت پر ہیں۔جن کی آج اینٹی کرپشن عدالت میں شنوائی کی جائے گی۔ذرائع نے بتایا کہ اینٹی کرپشن ملتان نے کروڑوں کی میڈیسن چوری کرنے اور انتظامیہ سے ملکر خورد برد کے الزام پر فارمیسی ڈسپنسر ریاض حسین کیخلاف تحقیقات شروع کر دی ہیں جسے چند روز تک گرفتار کیا جا سکتا ہے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر