بچوں کی پیدائش پر کنٹرول مسئلے کا حل نہیں ہے ،سید عبدالرشید

بچوں کی پیدائش پر کنٹرول مسئلے کا حل نہیں ہے ،سید عبدالرشید

کراچی(اسٹاف رپورٹر)متحدہ مجلس عمل کے رکن سندھ اسمبلی سید عبدالرشید نے ایم کیو ایم کی رکن اسمبلی رعنا انصار کی کنٹرول برتھ پروگرام سے متعلق قرارداد کی مخالفت کرتے ہوئے کہا ہے کہ بچوں کی پیدائش پر کنٹرول مسئلے کا حل نہیں ہے ۔ اللہ کے بنائے گئے نظام سے ٹکرائیں گے تو یقیناًنقصان اٹھائیں گے ۔ ان کا کہنا تھا کہ آبادی کو کنٹرول کرنے کے بجائے عوام کو ریلیف دلانے کے لیئے انتظامات کیئے جائیں ۔ ہمارے ہاں جن بچوں کی پیدائش ہوچکی ہے انہیں سہولیات فراہم کرنے کے لیئے کوئی اقدامات نہیں کیئے جاتے ۔پانی روزگار اور وسائل کی کمی کو بچوں کی پیدائش سے جوڑنا درست نہیں ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ حکومت مسائل کے حل میں سنجیدہ نہیں ہے ۔انہوں نے کہا کہ اعداد و شمار کے مطابق پاکستان 84ویں نمبر پر ہے ۔اسی فہرست میں شامل ترقی یافتہ ممالک ترکی اور جاپان میں بچوں کی پیدائش پر وظیفے دیئے جارہے ہیں ۔رکن اسمبلی سید عبدالرشید نے کہا کہ دو بچے پیدا کرنے والے کے پاس بھی بنیادی سہولیات موجود نہیں ہیں،انہیں ریلیف فراہم کرنا ہماری ترجیحات ہونی چاہیئے لیکن بدقسمتی سے ایسا نہیں ہے ۔انہوں نے کہا کہ حکومت اپنی نااہلی چھپانے کے لیئے قدرت سے ٹکرانے کی کوشش کرے گی تو نقصان اٹھانا پڑے گا ۔ہم مزید کسی نقصان کے متحمل نہیں ہوسکتے ۔انہوں نے کہا کہ برتھ کنٹرول پروگرام پر کام کیا گیا تو 40 سال بعد نوجوانوں کا نہیں بزرگوں کا پاکستان کہلائے گا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر