کراچی ، خرم شیر زمان کے اہلخانہ بھی اسٹریٹ کرائم کا شکار بن گئے

کراچی ، خرم شیر زمان کے اہلخانہ بھی اسٹریٹ کرائم کا شکار بن گئے

کراچی(کرائم رپورٹر)شہرقائد میں اسٹریٹ کرائم کی وارداتوں میں اضافہ ہوگیا ہے۔تحریک انصاف کراچی ڈویژن کے صدر اور رکن سندھ اسمبلی خرم شیر زمان کے اہلخانہ بھی اسٹریٹ کرائم کا شکار بن گئے،لیاقت آباداور نارتھ کراچی میں مسلح ڈکیت گھراورآفس کا صفایا کر کے فرار ہو گئے، شہر میں مختلف کارروائیوں کے نتیجے میں 8 ملزمان کو گرفتار کر لیاگیا۔تفصیلات کے مطابق کراچی کے پوش علاقے کلفٹن میں ایم پی اے خرم شیر زمان کے اہلخانہ سے لوٹ مار کا واقعہ پیش آیاہے۔خرم شیر زمان نے واقعے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ رہزنی کے بڑھتے واقعات پر سندھ حکومت کی خاموشی مجرمانہ ہے۔انہوں نے کہاکہ اہلخانہ کے ساتھ لوٹ مار کا واقعہ کلفٹن میں پیش آیا، یہ میرے گھر والوں کا نہیں بلکہ کراچی کے ہر شہری کا مسئلہ ہے۔انہوں نے کہاکہ 5سال سے اس مسئلے پر آواز اٹھا رہا ہوں، لیکن اب تک کوئی خاطرخواہ اقدامات سامنے نہیں آئے۔لیاقت آباد کے علاقے سندھی ہوٹل کے قریب ڈکیت ایک گھرکا صفایا کرکے فرار ہوگئے۔ڈکیتی کی واردات کی سی سی ٹی وی فوٹیج منظرعام پر آگئی ہے، جس کے مطابق 3 موٹر سائیکلوں پر سوار 5 ملزمان اطمینان کے ساتھ گھر میں داخل ہوگئے۔ملزمان اسلحے کے زور پر اہل خانہ کو یرغمال بنا کر گھر میں موجود 4لاکھ روپے اور سونے کے زیورات لے کر فرار ہوگئے ۔ملزمان نے جاتے ہوئے گھر کے دروازے کو باہر سے لاک بھی کر دیا۔دوسری جانب نارتھ کراچی کے سیکٹر فائیو سی ون میں انٹرنیٹ سروس کے آفس میں 2 مسلح ڈکیت اسلحے کے زور پر لوٹ مار کر کے فرار ہوگئے۔اس واردات کی سی سی ٹی وی فوٹیج کے مطابق 2مسلح ڈکیت آفس میں داخل ہوئے جنہوں نے وہاں موجود افراد سے موبائل فون، نقد رقم اور دیگر قیمتی اشیاء لے کر فرار ہو گئے۔ڈاکس کے علاقے سلطان آباد میں پولیس نے منشیات فروشی کے اڈے پر چھاپہ مار کر 3 منشیات فروشوں کو ہیروئن، چرس اور اسلحے سمیت گرفتار کر لیا جبکہ کارروائی کے دوران بدنام زمانہ منشیات فروش عظمت عرف کاکی 3 کلو چرس چھوڑ کر فرار ہو گیا۔سہراب گوٹھ اور میمن گوٹھ میں 2 منشیات فروش فقیر اور خورشید کو گرفتار کر کے 1 کلو سے زائد چرس برآمد کرلی۔تیموریہ پولیس نے کے بی آر سوسائٹی میں کارروائی کر کے 3 اسٹریٹ کرمنل علی، مدثر اور عمران کو اسلحے، موبائل فون اور موٹر سائیکل سمیت گرفتار کر لیا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر